بچوں کے ساتھ بداخلاقی کے واقعات تشویشناک ہیں،نصیر احمد

      بچوں کے ساتھ بداخلاقی کے واقعات تشویشناک ہیں،نصیر احمد

  



لاہور(نمائندہ خصوصی)پیپلز پارٹی انسانی حقوق ونگ لاہور کے رہنماء نصیر احمد،چوہدری صابر حسین بھلہ ٹکٹ ہولڈر این اے 119 نے اپنے مشترکہ بیان میں پنجاب میں بچوں کے ساتھ بد اخلاقی کے بڑھتے واقعات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے زینب الرٹ بل صرف اسلام آباد کیلئے منظور کیا ہے جبکہ چاروں اسمبلیوں نے اس پر ابھی کوئی قانون سازی نہ کی ہے۔ پنجاب میں روزانہ کی بنیاد پر کم سن بچے اور بچیوں پر جنسی درندگی کے واقعات رپورٹ ہو رہے ہیں ان واقعات میں کمی ہونے کی بجائے روز بروز اضافہ ہو رہا ہے۔ پنجاب اور لاہور میں ابھی تک کسی ایک بھی مجرم کو عبرتناک سزا ئیں ہوئی ہے ان واقعات کی بڑھتی ہوئی تعداد کا سبب والدین کا بدنامی کے ڈر سے رپورٹ نہ کروانا۔ پولیس رپورٹ کرنے پر نرم دفعات کے تحت مقدمات کا اندراج، بروقت انویسٹی گیشن کا نہ ہونا اور گواہوں کی عدم موجودگی اور مدعیوں پر دھونس، وباؤ اور رقم دیگر مقدہ سے دستبرداری شامل ہے۔ بچوں پر جنسی درندگی کے قانون نہ ہونے بھی ان واقعات میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔ پنجاب حکومت نے صرف زبانی جمع خرچ کے ذریعے حکومت چلا رہی ہے۔حکومتی ارکان اسمبلی ان واقعات پر قانون سازی کرنے کی بجائے اپوزیشن پر جگت بازی چور چور کے نعرے لگانے لڑائی جھگڑے کر رہے ہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت ان بڑھتے ہوئے واقعات پر سنجیدگی سے فوری طور پر قانو ن سازی کر کے تاکہ مجرموں کو عبرتناک کے سزائیں دی جائے۔ انہوں نے اپوزیشن ارکان سے بھی کہا کہ وہ تمام معاملات چھوڑ کر معاشرے میں بڑھے ہوئے جنسی درندگی کے واقعات پر قانون سازی کر کے لیے اپنی آواز بلند کریں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1