پسند کی شادی کرنیوالا جوڑا پولیس کے خوف سے ہائیکورٹ پہنچ گیا

پسند کی شادی کرنیوالا جوڑا پولیس کے خوف سے ہائیکورٹ پہنچ گیا

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)پسند کی شادی کرنیوالا جوڑا پولیس کے خوف سے انصاف کیلئے ہائیکورٹ پہنچ گیا،انارکلی کی رہائشی 20سالہ حمیرا بی بی بی اپنے شوہر محمد طیب کے ہمرا ہائیکورٹ پہنچی اورچیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ سے تحفظ فراہم کرنے کی اپیل کر دی،صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے حمیرا بی بی نے کہا کہ اس نے محمد طیب کے ساتھ پسند کی شادی کی ہے،کسی نے اسے اغوا نہیں کیا تاہم گھر والوں نے شوہر پر جھوٹا اغوا مقدمہ درج کروا رکھا ہے، 27جنوری 2020ء کو طیب کے ساتھ نکاح کیا تھا،نکاح نامہ بھی موجود ہے مگر پولیس گھر والوں کے ساتھ مل کر جان سے مارنے کی دھمکیاں دے رہی ہے،پولیس کی جانب سے جان بوجھ کر ہراساں کیا جا رہا ہے،جان کو خطرہ لاحق ہے جبکہ حمیرا بی بی کے شوہر محمد طیب نے کہا کہ سسرال والوں نے پولیس کے ساتھ مل کر میرے والد کو پانچ دن سے گرفتار کر رکھا ہے اور مقدمہ بھی تاحال درج نہیں کیا اور ہمیں بھی قتل کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں، چیف جسٹس ہمیں انصاف فراہم کریں جھوٹا مقدمہ خارج کر کے تحفظ فراہم کرنے کا حکم دیں۔

جوڑا عدالت

مزید : صفحہ آخر