شہریار آفریدی کے حافظہ کی تیزی کیلئے منشیات کی ترغیب کے بیان پرقومی اسمبلی میں ہنگامہ

  شہریار آفریدی کے حافظہ کی تیزی کیلئے منشیات کی ترغیب کے بیان پرقومی اسمبلی ...

  



اسلام آباد (آئی این پی) قومی اسمبلی اجلاس میں سپیکر نے فضائی آلودگی سے کینسر کی بیماری پیدا ہونے کی تحقیقات کیلئے موسمیاتی تبدیلی اور قومی صحت کی کمیٹیوں کا مشترکہ اجلاس بلانے کی ہدایت کر دی وزیر انسداد منشیات شہریار آفریدی کے مدارس کے عالم کی جانب سے طالب علموں کو حافظہ تیز کرنے کیلئے منشیات کی ترغیب دینے کے حوالے سے بیان پر جمعیت علماء اسلام (ف) کے ارکان نے شدید احتجاج کیا۔ مولانا اسد محمود خان نے کہا کہ شہریارآفریدی نے جھوٹ بولا، جرات ہے تو مدرسہ کا نام لیں جبکہ قومی اسمبلی کو آگاہ کیا گیا ہے کہ معیار پر پورا نہ اترنے والے نجی ٹیسٹنگ اداروں کو بلیک لسٹ کیا جائے گا، پی آئی اے کو خسارہ سے بچانے کیلئے کم مسافروں والے روٹس پر پروازوں کو کم کیا گیا ہے، فضائی آلودگی سے کینسر کی بیماری پیدا ہونے کے امکانات جانے کیلئے کوئی مستند تحقیق موجود نہیں ہے، سکولوں اور تعلیمی اداروں میں منشیات کے تدارک کیلئے زندگی کے نام سے ایک مہم شروع کی ہے، گزشتہ 2سال کے دوران پی ٹی وی سے 77ملازمین کو برطرف کیا گیا۔قومی اسمبلی کا اجلاس سپیکر اسد قیصر کی زیر صدارت ہوا۔ وقفہ سوالات میں وزیر پارلیمانی امور علی محمد خان، وزیر موسمیاتی تبدیلی زرتاج گل، وزیر برائے انسداد منشیات شہریار آفریدی، وزیر وفاقی تعلیم شفقت محمود و دیگر نے سوالات کے جواب دئیے۔ وزیر پارلیمانی امور علی محمد خان نے کہا کہ معیار پر پورا نہ اترنے والے نجی ٹیسٹنگ اداروں کو بلیک لسٹ کیا جائے گا، اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کے ساتھ مل کر پیپرا رولز بنا رہے ہیں، ان کو ریگولیٹ کیا جا رہا ہے، شکایت کا ازالہ کریں گے۔ عمر ایوب خان نے کہا کہ وزارت توانائی میں 10250 آسامیوں پر بھرتی کر رہے ہیں، تمام عمل شفاف ہے اور میرٹ پر بھرتیاں کی جائیں گی۔ پارلیمانی سیکرٹری ہوابازی جمیل احمد نے کہا کہ کراچی سے لندن پی آئی اے کی فلائٹس کم کر کے ایک کر دی ہے، پی آئی اے کے خسارے کو کم کرنے کیلئے جن روٹس پر مسافروں کی تعداد 60 فیصد سے کم ہے پروازوں کی تعداد کم کر دی ہے، پیرس اور بارسلونا کی پرواز وں پر 980ملین خسارہ ہوا۔ وزیرموسمیاتی تبدیلی زرتاج گل نے کہا کہ فضائی آلودگی اور سموگ کی وجہ سے کینسر کی بیماری لاحق ہو سکتی ہے، گزشتہ حکومت میں ایک ماربل فیکٹری میں 150 لوگ پھیپھڑوں کے کینسر کی وجہ سے فوت ہوئے تھے، جس پر فیکٹری بند کی گئی تھی، اس پر تحقیق کر کے رپورٹ بننی چاہئے۔ وجیہ اکرم نے کہا کہ سکولوں اور کالجوں کیلئے 200بسوں پر عملہ نہ ہونے کی وجہ سے کھڑی ہیں، بھرتیاں ہونے سے یہ چلائی جائیں گی۔شہریار آفریدی نے کہا کہ سکولوں اور تعلیمی اداروں میں منشیات کے تدارک کے لئے زندگی کے نام سے آگاہی مہم شروع کی گئی ہے، ارکان پارلیمنٹ اس مہم میں ساتھ دیں،

کچھ دن قبل ایک خبر آئی کہ مدرسہ میں ایک مولوی صاحب نے بچوں کو کہا کہ منشیات استعمال کریں حافظہ مضبوط ہو گااس پر اسد محمود نے کہا کہ شہریار آفریدی نے جھوٹ بولا ہے جرات ہے تو مدرسہ کا نام لیں، وہ جھوٹ بول کر جو مقاصد حاصل کرنا چاہتے ہیں وہ مقاصد حاصل نہیں کرنے دیں گے۔ شہریارآفریدی نے کہا کہ میں نے کسی مدرسہ کا نام نہیں لیا، عالم کی بات کی ہے اس کی ویڈیو ایوان میں پیش کروں گا۔ ایم ایم اے کے ارکان نے شہر یار آفریدی کے بیان پر احتجاج کیا۔

قومی اسمبلی ہنگامہ

مزید : صفحہ آخر