جماعت اسلامی کا 20فروری سے مہنگائی، بیروزگاری کیخلاف ملک گیر تحریک کا اعلان

جماعت اسلامی کا 20فروری سے مہنگائی، بیروزگاری کیخلاف ملک گیر تحریک کا اعلان

  



لاہور(خصوصی رپورٹ)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ مہنگائی سے ملک دیوالیہ، تبدیلی کا نعرہ قبر کے سکون پر دفن ہو گیا۔20 فروری سے مہنگائی اور بیروزگاری کے خلاف ملک گیر احتجاجی تحریک شروع کررہے ہیں۔ حکومت عوام کو سبسڈی نہیں، دھوکہ دے رہی ہے۔ ڈاکٹر، مریض، کسان، مزدور اساتذہ، طلبا، ملازمین سب پریشان ہیں۔موجودہ حکومت کے آنے کے بعد سانس لینا مشکل ہو گیا ہے۔ پاکستان کے 22کروڑ عوام شدید معاشی بحران کا شکار ہیں۔پاکستانیوں کی لیے اب پانی پینا بھی مشکل ہو گیا ہے۔حکومت نعروں اور اعلانات تک محدود ہے۔آج پاکستان کی حکومت کاپاؤں عوام کی گردن اور ہاتھ گریبان پر ہے۔حکومت ہر روز جھوٹے اعلانات کرتی ہے.دن بدن ملک کی معاشی صورتحال بد سے بدتر ہو رہی ہے۔حکومت آئی ایم ایف سے کیے گئے تمام معاہدے فوری منسوخ کرے۔ حکومت ملک کی جمع پونجی آئی ایم ایف کے حوالے کر رہی ہے۔لوگ مہنگائی اور بے روزگاری کے ہاتھوں تنگ آکر خودکشیاں کر رہے ہیں۔لوگ گندم، آٹا، چینی اور دال کیلئے لائن میں لگے ہوئے ہیں۔ترک صدر طیب اردگان کا پاکستان آمد پر خیر مقدم کرتے ہیں اور انہیں خوش آمدید کہتے ہیں۔طیب اردگان سے درخواست کروں گا ہمارے وزیراعظم کو بھی سمجھائیں پاکستان کو معاشی مسائل سے کیسے نکالیں۔ترکی نے ہمیشہ کشمیر فلسطین پر دوٹوک موقف اختیار کیا ہے جس پر ان کے شکر گزار ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے نیشنل پریس کلب اسلام آباد کے سامنے مہنگائی و بے روزگاری کے خلاف مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ امت کی نمائندگی پر ترک صدر کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔اس وقت پاکستان22 کروڑ عوام معاشی حالات سے شدید مشکلات کا شکار ہیں۔طیب اردوان کوئی فارمولا دیں تاکہ ہماری حکومت اعلانات سے آگے بڑھ کر کوئی عملی کام کر سکے۔ہر روز غلط اعداد و شمار سے قوم کو گمراہ کیا جاتا ہے پوری قوم حکومت کے آئی ایم ایف معاہدے کیخلاف ہے۔ جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سینیٹر سراج الحق سے کنونیئر کل جماعتی کشمیر رابطہ کونسل و چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی عبدالرشید ترابی نے ملاقات کی،اس موقع پر عبدالرشید ترابی نے مقبوضہ کشمیر کی تازہ ترین صورت حال سے آگاہ کیااس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ کشمیرکو ہندوستانی تسلط سے آزاد کروانے کے لیے حکومت پاکستان موثر اقدامات کرے، مسئلہ کشمیر محض تقریروں سے حل نہیں ہوگا بلکہ اس کے حل کے لیے موثر اقدامات کرنا ہوں گے،عالمی سطح پر موافق فضا سے فائدہ اٹھانے کی ضرورت ہے وزیر اعظم پاکستان عمران خان خود دنیا کے اہم دارالحکومتوں کا دورہ کریں،سفارتی مشنز کو متحرک کریں گلگت بلتستان اور آزادکشمیر حکومتوں کو با اختیار اور باوسائل بنائیں ہائیڈرل منصوبوں کی رائلٹی دونوں آزاد خطوں کو فراہم کی جائے،اقتصادی رابطہ کونسل میں ان خطوں کو سرفہرست رکھا جائے۔

جماعت اسلامی

مزید : صفحہ آخر