سعید غنی کا کلثوم بائی اسپتال کا اچانک دورہ،مختلف شعبوں کا جائزہ لیا

  سعید غنی کا کلثوم بائی اسپتال کا اچانک دورہ،مختلف شعبوں کا جائزہ لیا

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر) وزیر تعلیم و محنت سندھ سعید غنی نے بدھ کے روزصبح 9.00 بجے سے قبل سائٹ میں واقع سیسی کے زیر انتظام چلنے والی کلثوم بائی ولیکا اسپتال کا اچانک دورہ کیا اور وہاں اسپتال کے مختلف شعبوں کا جائزہ لیا۔ صوبائی وزیر نے اسپتال کی او پی ڈیز میں 5 ڈاکٹروں کی تاخیر سے آمد اور پیرا میڈیکل و دیگر نان ٹیکنیکل 10 سے زائد اسٹاف کی غیر حاضری پر ان سب کو تنبیہ لیٹرز جاری کرنے کے احکامات بھی دئیے جبکہ اسپتال کے میڈیکل سپریڈینٹ کو بھی تاخیر سے آنے پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے انہیں 9.00 بجے سے قبل اسپتال میں موجود رہنے کی سختی سے ہدایات دی۔ صوبائی وزیر نے اسپتال میں مریضوں کو فراہم کی جانے والی ادویات کے اسٹاک اور فراہم کئے جانے والے کاؤنٹرز کا بھی دورہ کیا اور وہاں صفائی کے فقدان پر بھی برہمی کا اظہار کیا۔ صوبائی وزیر نے ادویات کے مختلف نمونے بھی لئے اور اس حوالے سے اسپتال کے ایم ایس اور دیگر ذمہ داران سے ان کی تفصیلات کی فراہمی کی بھی ہدایات دی۔ تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیر تعلیم و محنت سندھ سعید غنی نے بدھ کی صبح 9.00 بجے سے قبل سائٹ میں واقع ولیکا اسپتال کا اچانک دورہ کیا اور وہاں مختلف امراض کے حوالے سے چلنے والی او پی ڈیز کا دورہ کیا۔ اس موقع پر کئی او پی ڈی کے باہر مریضوں کی جانب سے ڈاکٹرز کے تاحال نہ آنے کی شکایات پر انہوں نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے 5 مختلف شعبوں کے ڈاکٹرز کو فوری طور پر تنبیہ خطوط جاری کرنے کے احکامات دئیے۔ اس موقع پر انہوں نے دیگر اسٹاف کے تمام حاضری رجسٹرڈ منگوا کر اس وقت تک نہ آنے والے تمام ملازمین کو بھی تنبیہ خطوط جاری کرنے کی ہدایات دی اور جن ملازمین نے حاضری رجسٹر میں حاضری نہیں لگائی تھی ان سب کو غیر حاضر تصور کرتے ہوئے ان کی اس روز کی تنخواہ منہدم کرنے کی بھی ہدایات دی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر