19فروری کو ہونیوالے الیکشن،محض الیکشن نہیں ووٹ چوروں کیخلاف جنگ،اب حکومت سے لانگ مارچ میں فیض آباد جا کر بات ہوگی:مریم نواز

19فروری کو ہونیوالے الیکشن،محض الیکشن نہیں ووٹ چوروں کیخلاف جنگ،اب حکومت سے ...

  

 ڈسکہ،لاہور (نامہ نگار،تحصیل رپورٹر، جنرل رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) پاکستان مسلم لیگ(ن) کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے عمران خان ملکی تاریخ کے سب سے بڑے چور ہیں، لانگ مارچ عمران خان کو گھر بھیجنے کا آخری چانس ہے، 19 فروری کو ہونیوالے الیکشن، محض الیکشن نہیں بلکہ ووٹ چوروں کیخلاف جنگ ہے جبکہ حکومت سے قانون سازی یا سینیٹ کی نشستوں پر بات نہیں ہوگی، لانگ مارچ میں فیض آباد جا کر بات ہوگی۔سیالکوٹ کی تحصیل ڈسکہ میں پاور شو سے خطاب کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا 19 فروری کو ڈسکہ میں شیر آ رہا ہے۔ یہ صرف الیکشن نہیں جنگ ہے۔ الیکشن والے دن شیر پر مہر لگانی ہے۔ نواز شریف نے ووٹ چوروں کیخلاف جنگ شروع کی ہے۔ تاریخ میں پہلی بار پنجاب اپنے حق کیلئے کھڑا ہوگیا ہے۔ ڈسکہ میں عمران کا بندہ ووٹ مانگنے آئے توپوچھنا کس منہ سے ووٹ مانگنے آئے ہو، یہ جہاں نظرآئے نعرہ لگانا سب سے بڑا چورعمران خان، خواجہ آصف کو کہا گیا نوازشریف کو چھوڑ دو لیکن سینئر لیگی رہنما نے کہا مر جاؤں گا اپنے قائد کو نہیں چھوڑوں گا، اسی وجہ سے انہیں سزا دی گئی۔ پورا پاکستان کہہ رہا ہے کوئی شرم ہوتی ہے کوئی حیاء ہوتی ہے۔ نوازشریف نے چارسال پہلے کہا تھا عمران جاؤکرکٹ کھیلو، نوازشریف نے دودفعہ بیگناہی کے باوجود جیل کاٹی، عوام کیلئے سرنہیں جھکایا، چارسال پہلے جوبات کہی وہ آج سچی ثابت ہورہی ہے کہ عمران تمہارے بس کا روگ نہیں، تابعدارکوسلیکٹ کرکے لائے تھے شائد عوام کی خدمت کریگا، اسے عوام نے سلیکٹ نہیں کیا وہ اپنے سلیکٹرزکی خدمت کرنے میں لگا ہے، روٹی،آٹا،چینی،بجلی،گیس مہنگی توکہتا ہے کوئی جادوکا بٹن نہیں۔ مہنگائی پر ان کے وزراء کہتے ہیں اپنے خرچے کم کریں۔ مہنگی ایل این جی سے کچن کا خرچہ چلانے والوں کی جیبیں بھری گئیں۔ عمران خان کہتے ہیں عوام بھوکے مرجائیں تو میں کیا کروں۔ 50 لاکھ گھروں کے بعد انڈے، کٹے کا کہا گیا کیا کسی کو کٹا، مرغی ملی، جس کے پاس کٹا تھا وہ مر غیوں پرآگیا، جس کے پاس انڈے تھے وہ فاقوں پرآگیا، نوازشریف،شہبازشریف کے بعد پنجاب لاوارث ہوگیا۔ جھوٹے عمران نے ایک کروڑ نو کر یا ں کا دعویٰ کیا تھا، کیا کسی کونوکری ملی؟ اگرایک کروڑمیں سے کسی ایک کونوکری ملی توسٹیج پرلاؤگلے میں ہارڈالوں گی، لوگوں کوگھرنہیں ایک کمرہ بھی نہیں ملا۔لیگی نائب صدر کا کہنا تھا چیئرمین سینیٹ کے الیکشن میں کس نے ووٹ چوری کیے تھے؟ اب تمہارے ایم پی ایزکھسک رہے اورشوآف ہینڈ یاد آگیا، اپوزیشن تمہارا ساتھ نہیں دیگی، کہتا ہے اگرخفیہ ووٹنگ ہوئی تواپوزیشن ہی رو ئے گی واہ،واہ، اتنی اپوزیشن سے ہمدردی، سینیٹ میں مسلم لیگ کی پانچ سیٹیں ہیں، ایک سیٹ بھی نہ ملے جھوٹے کیساتھ ہم کوئی بات نہیں کریں گے۔ ویڈیوریلیزکرنے،بنانے اورپیسے دینے والے بھی خود ہیں، بڑے معصوم بنتے ہوکہتے ہیں اپوزیشن شوآف ہینڈ میں ساتھ نہیں دے رہی۔اس سے قبل لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا  ویڈیو بنانیوالے، پیسے لینے اور دینے والے یہ خود ہیں، مناسب ٹائمنگ پر ویڈیو ریلیز کی گئی، حکمرانوں کی اصلیت عوام کے سامنے آگئی، ایک نالائق کو بچانے کیلئے ہر حربہ استعمال ہو رہا ہے۔ مسلم لیگ (ن) کو توڑنے کی تاریخی کوشش ہوئی، نواز شریف کا نظریہ لوگوں نے دل سے اپنایا، آپ جماعت توڑ سکتے ہیں لیکن نظریہ نہیں، پی ڈی ایم خفیہ رائے شماری کو سپو رٹ نہیں کرتی، خفیہ بیلٹ میں صرف پیسہ نہیں چلتا، وفاداری تبدیل کرنے کیلئے فون کرائے جاتے ہیں۔ایک نالائق کو بچانے کیلئے سارے حربے استعمال کیے جا رہے ہیں، انصا ف کے 2 نظام کیخلاف آواز اٹھا رہے ہیں، گلی گلی محلے محلے، آٹا اور بجلی چور کی آوازیں لگ رہی ہیں، الیکشن اصلاحات ضرور کریں گے، پی ڈی ایم بھی یہی چاہتی ہے۔ عوام کا فیصلہ جعلی حکومت کیخلاف اور شیر کے حق میں ہوگا۔ ایک نا اہل اور نالائق شخص کوبچا نے کیلئے انصاف کے پورے نظام اور ججز کی عزت کو جھونکا جارہا ہے،یہ عدلیہ کی عزت اورکریڈیبلٹی کیلئے اچھی چیز نہیں، بندہ تابعدار کیساتھ بیٹھ کر قانون سازی نہیں ہوسکتی، جہاں جہاں عوام کی طاقت ہوگی وہاں (ن)لیگ کو شکست دینا ناممکن ہے،ہمیں علم ہے جو پارٹی کیخلاف غداری یا بیوفائی نہیں کرنا چاہتا، رابطے اوپر ہوتے ہیں، ہر کسی کو اعتماد میں نہیں لیا جاتا، بیک ڈور رابطوں کی ضرورت ان کو ہے جو مشکل میں ہیں، ہمیں نہیں۔ ڈسکہ میں حکمرانوں کو جیت نظر آرہی ہے تبھی عطا اللہ تارڑ والا واقعہ ہوا،تبھی اس قسم کے ہتھکنڈے استعمال ہو رہے ہیں، ان کو سمجھ نہیں آرہی ہر ہتھکنڈا استعمال کرنے کے باوجود ان کو شکست ہوئی ہے، ان کی اصلیت عوام کے سامنے کھل کر آگئی ہے۔ جوہماری جماعت کو چھوڑے گا اس کا احتساب عوام کرتے ہیں۔اراکین بھاگنے سے مہرے کو تکلیف ہوئی ہے لیکن پی ڈی ایم اس کو کوئی ریلیف نہیں لینے دے گی۔چیئرمین سینٹ کا انتخابات چوری ہوا، جج ملک ارشد کا معاملہ ہوا، آپ وہ بات کریں جس سے آپ کی اور آپ کے ادا ر ے کی کریڈیبیلٹی خراب نہ ہو۔ تبدیلی لوگوں کو پسند نہیں آئی تبدیلی کو ووٹ دینے والے چھپتے پھر رہے ہیں۔

مریم نواز

مزید :

صفحہ اول -