معصوم بچوں کو پلائی گئی اربوں کی ایکسپائر پولیو ویکسین پکڑی گئی،والدین میں خوف و ہراس

معصوم بچوں کو پلائی گئی اربوں کی ایکسپائر پولیو ویکسین پکڑی گئی،والدین میں ...

  

 لاہور(جنرل رپورٹر) صوبائی دارالحکومت لاہور میں پولیو سے بچاؤ کے لئے استعمال کی جانیوالی جعلی اور ایکسپائر اربوں روپے مالیت کی پولیو ویکسین پکڑ ی گئی۔ ایسی ویکسین کا پورا گودام سامنے آنے پر محکمہ صحت اور ضلعی انتظامیہ میں تھر تھلی مچ گئی جس کے بعد پوری انتظامیہ موقع پر پہنچ گئی،جہاں ویکسین کی کروڑوں پولیو وائلز برآمد کر لی گئیں تاہم یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ یہ کہاں سپلائی کی جا رہی تھی اور کہاں سے گودام میں لائی گئی۔محکمہ صحت نے مدعا چھپانے کے لئے ایک انوکھی حکمت عملی تیار کی جس میں بتایا گیا کہ وائیلیں ایکسپائر تھیں لیکن ان میں سے دوائی ضائع کر کے پلاسٹک دانہ بنانے کے لئے حاصل کی جا رہی تھیں۔اتنی بڑی تعداد میں ایکسپائر پولیو ویکسین بر آمد ہونے کے بعد لاہور سمیت پورے صوبے میں پولیو کے خاتمے کے لئے چلائی جانیوالی پولیو مہم مشکوک ہو گئی ہے۔اس حوالے سے محکمہ صحت اور ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کی جانب سے حقائق کے بر عکس جو بیانیہ جاری کیا گیا کہ بیگم کوٹ چیمہ والا کھوہ کے قریب سکریپ کے گوداموں سے ٹریویلینٹ پولیو ویکسین کی بڑی کھیپ برآمد کر لی گئی۔پولیو مہم کے بعد تمام استعمال شدہ اور غیر استعمال شدہ وائلز ورکرز سے واپس لے کر محکمہ کو بھجوائی جاتی ہیں۔سکریپ کے گوداموں میں ہزاروں پولیو وائلز کی موجودگی سے پولیو مہمات کی تمام تر کوریج اور رپورٹس پر بھی سوالیہ نشان ہے۔محکمہ صحت نے کہا ہے کہ تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے تا ہم گودام مالکان کے خلاف چائلڈ لیبر ایکٹ کی خلاف ورزی کے الزامات لگا کر مقدمہ درج کرنے کے لئے درخواست جمع کروا دی گئی ہے۔

پولیو ویکسین

مزید :

صفحہ اول -