اغوا کیس:ملزم گرفتار ورنہ صوبے  بھر میں احتجاج‘ پی ایم اے کا اعلان

   اغوا کیس:ملزم گرفتار ورنہ صوبے  بھر میں احتجاج‘ پی ایم اے کا اعلان

  

 ملتان (وقا ئع نگار)  پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے رہنماں نے کہا ہے کہ ساہیوال میڈیکل کالج کے پروفیسر ڈاکٹر ساجد مصطفی کو تاوان کے لئے اغوا کرنے والے ملزمان کو فوری گرفتار کیا جائے ملزمان گرفتار نہ ہوئے(بقیہ نمبر37صفحہ 6پر)

 تو صوبہ بھر میں احتجاج کیا جائے گا اٹھارہ روز گزرنے کے باوجود پولیس کی نااہلی کی وجہ سے ملزمان کا سراغ نہیں مل سکا پولیس ملزمان کو گرفتارکر کے تاوان کی رقم برآمد کرے آج سے ڈاکٹرز احتجاجا کالی پٹیاں باندھ کر کام کریں گے یہ بات پی ایم اے ملتان، ساہیوال، اوکاڑہ، چیچہ وطنی، عارف والا اور پاکپتن کے رہنماں نے مشترکہ پریس کانفرنس میں کہی انہوں نے کہا کہ معروف چائلڈ سپیشلسٹ پروفیسر ڈاکٹر ساجد مصطفی کو 25 جنوری کی شام ان کے کلینک کے قریب سے تین مسلح افراد نے اغوا کر لیا تھا اغوا کے فورا بعد پولیس کو اطلاع دی گئی مگر پولیس بروقت ناکہ بندی کرنے میں ناکام رہی جس کی وجہ سے ملزمان بآسانی اپنی منزل پر پہنچ گئے جس مقام سے ڈاکٹر ساجد مصطفی کو اغوا کیا گیا وہاں پر پولیس کی موبائل موجود رہتی تھی مگر وقوعہ کے وقت پولیس وہاں موجود نہیں تھی  اغوا کے بعد ملزمان نے ڈاکٹر ساجد مصطفی کی رہائی کے لئے بھاری تاوان کا مطالبہ کیا تھا پولیس نے ملزمان کے خلاف اغوا کا مقدمہ درج کیا مگر پولیس ملزمان کا سراغ لگانے اور انہیں گرفتار کرنے میں ناکام رہی اغوا کے دوران ملزمان اہل خانہ کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دیتے رہے  پولیس اغوا کے بعد پانچ روز  تک ملزمان کا سراغ نہ لگا سکی جس پر اہل خانہ اغوا کاروں سے مذاکرات کرنے پر مجبور ہوئے اور مذکرات کے بعد ملزمان نے تاوان کے عوض رہائی پر آمادگی ظاہر کی اہل خانہ نے قریبی دوستوں اور رشتے داروں سے رقم کا انتظام کیا اور یہ رقم ملزمان کے حوالے کی گئی  ملزمان نے تاوان کی رقم وصول کرکے ڈاکٹر ساجد مصطفی کو رہا کیا انہیں اغوا کے دس روز بعد رہائی ملی پولیس تاحال اغوا کاروں کا سراغ لگانے میں ناکام رہی ہے ساہیوال میں گزشتہ دو سالوں کے دوران اغوا برائے تاوان کی یہ چوتھی واردات تھی مگر پولیس کسی بھی واردات کا سراغ نہیں لگا سکی ہے ملزمان کا گرفتار نہ ہونا پولیس کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔ ملزمان کی عدم گرفتاری کی وجہ سے ڈاکٹرز کمیونٹی میں بے چینی پائی جاتی ہے پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن اور ینگ ڈاکٹرز نے وزیراعظم پاکستان، وزیراعلی پنجاب، وزیر صحت پنجاب اور آئی جی پنجاب سے مطالبہ کیاہے کہ پروفیسر ڈاکٹر ساجد مصطفے کو اغوا کرنے والے ملزمان کو گرفتار کر کے تاوان کی رقم برآمد کی جائے اگر پولیس نے ملزمان کو گرفتار نہ کیا تو صوبہ بھر میں احتجاج کیا جائے گا۔

پی ایم اے کا اعلان

مزید :

ملتان صفحہ آخر -