لال سوہانرا پارک سے 3 ہرن چوری‘ سرکاری ملازمین ملوث‘ ذرائع 

لال سوہانرا پارک سے 3 ہرن چوری‘ سرکاری ملازمین ملوث‘ ذرائع 

  

بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر)نیشنل پارک لال سوہانرا سے تین ہرن چوری ہونیوالہ واقعہ میں مبینہ طورپر سرکاری ملازمین کا بھی ملوث ہونے کا بڑا انکشاف ہوا ہے، واقعہ میں محکمہ وائلڈ لائف محکمہ جنگلات کے چار ڈیلی ویجز ملازمین مبینہ طور پر شامل ہیں۔ ذرائع کے مطابق ہرن 25آر ڈی جنگلہ سے چوری ہوئے تھے مگر مذکورہ ملازمین اپنے آپ کو بچانے کیلئے یہ ظاہر کر رہے(بقیہ نمبر46صفحہ 6پر)

 ہیں کہ ہرن کسی مقامی آدمی کے تھے۔ذرائع نے یہ بھی انکشاف کیاہے کہ ملازمین سٹاک رجسٹر کے اندر ہرنوں کی تعداد کم لکھتے ہیں جو کہ حقیقت میں زیادہ ہوتی ہے،مقامی ملازمین اپنی مبینہ کرپشن کو بچانے کیلئے اعلی افسران کوہرن کے بچے بطور تحائف بھی پیش کرتے ہیں اور افسران کے دورہ کے موقع پر ان کی ہرن کے گوشت سے تواضع کی جاتی ہے ذرائع کے مطابق افزائش نسل سنٹر سے ملازمین ہرن کے بچے فروخت کرنے میں بھی ملوث ہیں اگر کسی غیر جانبدار آفیسر سے اس کی تحقیقات کرائی جائے تو مذید انکشافات بھی متوقع ہیں۔اس حوالے جب محکمہ جنگلات کے ڈی ایف او لال سوہانرا اعجاز تبسم سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ ہم اس معاملہ کی تحقیقات کر رہے ہیں اور دوران تحقیقات جو بھی ملازم اس میں ملوث پایا گیا اس کے خلاف سخت محکمانہ کاروائی عمل میں لائی جائیگی۔

ملازمین ملوث

مزید :

ملتان صفحہ آخر -