فلیگ میٹنگ سے قبل بھارت کا پراپیگنڈا، پاکستان نے منصوبے کے تحت سرحدی حدود کی خلاف ورزی کی: جنرل بکرم سنگھ کا دعویٰ

فلیگ میٹنگ سے قبل بھارت کا پراپیگنڈا، پاکستان نے منصوبے کے تحت سرحدی حدود ...
فلیگ میٹنگ سے قبل بھارت کا پراپیگنڈا، پاکستان نے منصوبے کے تحت سرحدی حدود کی خلاف ورزی کی: جنرل بکرم سنگھ کا دعویٰ

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی فوج کے سربراہ جنرل بکرم سنگھ نے ایک مرتبہ پھر الزام دوہراتے ہوئے کہاکہ پاکستان نے سوچے سمجھے منصوبے کے تحت کنٹرول لائن پر فائرنگ کی ، پاکستان کی جانب سے لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کی گئی توبھرپور جواب دینے کا حق محفوظ رکھتے ہیں۔کنٹرول لائن پر فلیگ میٹنگ سے کچھ دیر قبل نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے جنرل جنرل بکرم سنگھ نے چرونڈا کے علاقے میں پختہ بھارتی چوکیاں بنانے کی تردید کی اوردعویٰ کیاکہ لائن آف کنٹرول کا واقعہ ناقابل معافی ہے اوربھارت بھرپور جواب دینے کے لیے تیار ہے، بھارت یک طرفہ سیزفائر برقرار نہیں رکھے گا۔ بھارتی آرمی چیف نے دعویٰ کیاکہ پاکستان کے الزامات بے بنیاد ہیں، بھارتی فوج نے لائن آف کنٹرول پرچھ جنوری کو کوئی آپریشن نہیں کیا ،کنٹرول لائن پار کر کے حملہ پاکستانی فوج نے باقاعدہ ریکی کرکے کیا۔جنرل بکرم سنگھ نے کہا کہ لائن آف کنٹرول واقعے پر پاکستان سے آج سخت احتجاج کیا جائے گا۔ بکرم سنگھ نے پاکستان کی جانب سے بھارتی جارحیت کے ثبوت بھی تسلیم کرنے سے انکار کردیا۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ واقعہ میں حافظ سعید گروپ کے ملوث ہونے کی تصدیق نہیں ہوسکی۔ واضح رہے کہ گذشتہ کئی دنوں سے بھارت کی طرف سے سرحدی حدود کی خلاف ورزی ہوتی رہی اور اب پاکستان کے احتجاج کے بعد بھارت نے پراپیگنڈا مہم شروع کررکھی ہے ۔

مزید :

قومی -