اقبال ٹاؤن،پولیس کے کہنے پر سیکیورٹی گیٹ لگایا گیا

اقبال ٹاؤن،پولیس کے کہنے پر سیکیورٹی گیٹ لگایا گیا

لاہور (کرائم سیل)اقبال ٹاؤن کے علاقہ زینت بلاک میں چوری و ڈکیتی کی بڑھتی ہوئی وارداتوں کو کم کرنے کے لئے پولیس کے کہنے پر سکیورٹی گیٹ لگایا گیا جمشید اختر نے اپنے وکیل جمیل احمد سندھو کی وساطت سے روزنامہ ’’ پاکستان ‘‘ کو بتایا کہ گلی کے رہائشیوں محمود الرحمن ‘زریں گل ‘شیخ عتیق الرحمن اور میمونہ نے گلی میں موجود سکیورٹی گیٹ کو اتارنے کی کوشش کی تھی جس پر اہل محلہ نے انہیں روکنے کی کوشش کی جبکہ ان سے کوئی بد تمیزی نہیں کی گئی اور نہ ہی انہیں کسی طرح سے ڈرایا گیاتھا جمشید اختر کے وکیل کے مطابق ان کی جانب سے محلہ داروں سے کبھی کسی قسم کی کوئی زیادتی نہیں کی گئی ہے نہ ہی گیٹ اتارنے کے معاملے میں کسی فرد کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا بلکہ کسی قسم کی گالی گلوچ بھی نہیں کی گئی ‘مخالفین کی جانب سے لگائے گئے الزامات بے بنیاد ہیں اور ان میں کوئی صداقت نہیں ہے واضع رہے کہ 16دسمبر کو روزنامہ ’ ’ پاکستان ‘‘ میں اس گیٹ کے تنازع کے حوالے سے خبر میں ذکر کیا گیا تھا کہ خواجہ نوید ‘امجد‘مشتاق ‘جمشید پوما اور دیگر مسلح افراد نے گفٹ اتارنے کی کوشش پر زریں گل اور محمود الرحمن کو تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے جان سے مار دینے کی دھمکیاں دیں تھیں ۔

مزید : علاقائی