مطالبات منظور نہ ہونے پرسرکاری ملازمین کی احتجاج کی دھمکی

مطالبات منظور نہ ہونے پرسرکاری ملازمین کی احتجاج کی دھمکی

لاہور(خبرنگار) ملک بھر میں سرکاری ملازمین نے مطالبات منظور نہ ہونے پر لاہور سمیت پنجاب بھر کے سرکاری محکموں (دفاتر) کا مکمل بائیکاٹ اور ملک گیر احتجاجی تحریک چلانے کی دھمکی دے دی ہے۔ تفصیلات کے مطابق ایپکا پنجاب کی احتجاجی مہم حاجی محمد ارشاد چوہدری، صوبائی صدر ایپکا کی قیادت میں پنجاب کے دوسرے روز شیڈول کے مطابق محکمہ ڈی جی سوشل ویلفئیرآفس ، شملہ پہاڑی، لاہور و محکمہڈی جی زراعت آفس، ڈیوس روڈمیں جاری رہی۔ اس موقع پر سرکاری ملازمین نے ایپکا کی کال پر دفاتر کا مکمل بائیکاٹ رکھا اور دفاتر میں مکمل ہڑتال کی گئی اور حکومت و فنانس ڈیپارٹمنٹ کی ملازم دشمنی کے خلاف شدید نعرہ بازی کی گئی۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے حاجی محمد ارشاد چوہدریاور ایپکا کے دیگر رہنماؤں حاجی فضل داد گجر،مرکزی چئیرمین ایپکا، یونس بھٹی صدر ایپکا لاہور ڈویژن، حاجی زاہد ، راشد خان نے کہا کہ حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ ایپکا کے مطالبات جن میں بجٹ 2013 ء میں دیگر صوبوں سے 5% فرق ،صوبہ خیبر پختونخواہ کی طرز پر اپ گریڈیشن،گریڈپانچ تا سولہ تک تمام سرکاری ٹیکنیکل و نان ٹیکنیکل ملازمین کوبلا امتیاز ٹائم سکیل پروموشن کا اجراء، سپرنٹنڈنٹ کی اپ گریڈیشن، سکیل ریوائز ، پری میچور انکریمنٹ اپ گریڈیشن 2007 ء، سلیکشن گریڈ اسٹنٹ BS-15 کی اپ گریڈیشن ، سابقہ وزیر اعظم پاکستان کے اعلان کردہ 20% بلا امتیاز تمام سرکاری ملازمین کو دیا جائے ، مہنگائی کے تناسب سے تنخواہوں میں اضافہ، اکاونٹنٹ کی اپ گریڈیشن، پبلک ہیلتھ انجینرنگ ، لوکل گورنمنٹ ، بہبود آبادی پنجاب اور تمام محکمہ جات میں کنٹریکٹ / ڈیلی ویجز/بورڈ آف مینجمنٹ ملازمین جو 3 سال سے زائد سروس کر چکے ہیں کو ریگولر کیا جائے اور ٹیچر / پیرا میڈیکل پیکج دیگر ملازمین کو بھی دیا جائے و دیگر مطالبات شامل ہیں کو فی الفور منظور کیا جائے وگرنہ ایپکا کے احتجاج کا دائرہ کار وسیع ہوتا جا ئے گا۔

مزید : صفحہ اول