پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن پنجاب برانچ کی ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس

پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن پنجاب برانچ کی ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس

لاہور(کامرس رپورٹر)پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن پنجاب برانچ کی ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس دفتر پاکستان فلور ملز ایسوی ایشن لاہور میں منعقد ہوا۔ چوہدری افتخار احمد مٹو چےئرمین پنجاب نے اجلاس کی صدارت کی۔ اجلاس میں سابق سینٹرل چےئرمین اور گروپ لیڈر عاصم رضا احمد، سابق چےئرمین پنجاب لیاقت علی خان، میاں محمد ریاض اورمیاں انجم اسحاق کے علاوہ وائسچےئرمین، ممبران ایگزیکٹو کمیٹی اور صوبہ بھر سے فلور ملز مالکان/ممبران نے بھر پور شرکت کی۔اجلاس میں صوبہ بھر میں گندم اور آٹے کے نرخوں پر غور کیا گیا۔ممبران نے اس امر پر اطمینان کا اظہار کیا کہ صوبہ بھر میں گندم دستیابی کی مجموعی صورتِ حال تسلی بخش ہے ۔ کسی جگہ سے گندم کی قلت کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔آٹا مناسب نرخوں پر وافر مقدار میں مارکیٹ میں دستیاب ہے۔اجلاس میں ملک میں گندم کی نئی فصل کی کاشت اور گندم کی نئی فصل کی خریداری کے نرخوں پر بھی بحث کی گئی۔ اور متفقہ طور پر فیصلہ کیا گیا کہ ملک میں گندم کے ریٹ عالمی مارکیٹ کے مقابلے میں بہت کم ہیں ، جس کی وجہ سے فاضل گندم کی نکاسی کی کوئی راہ نہیں ہے، حکومت ملکی گندم کے نرخ عالمی مارکیٹ کے ساتھ منسلک کرے ، اور عالمی مارکیٹ کے نرخوں کو مدِ نظر رکھتے ہوئے ملکی گندم کے نرخ 900/روپے فی من مقرر کرے۔اور کسانوں کی فلاح کیلئے ان کو کھاد ، بیج، بجلی اور پیٹرولیم مصنوعات سستے داموں فراہم کرے۔اجلاس میں اس امر پر تشویش کا اظہار کیا گیا کہ ملک کی فلور ملز انڈسٹری میں ضرورت سے بہت زیادہ پھیلاؤ ہو چکا ہے۔ موجودہ انڈسٹری آنے والے پچاس سالوں کی ضروت سے بھی دو گنا زیادہ ہے۔ انڈسٹری میں غیر ضروری پھیلاؤ کی وجہ سے انڈسٹری گو ناں گو مسائل کا شکار ہے۔ اس کے علاوہ ملکی سرمایہ کا بھی ضےأ ہو رہا ہے۔ اس لئے حکومت سے مطالبہ کیا گیا کہ نئی فلور ملوں کے قیام پر پابندی لگائی جائے اور موجودہ انڈسٹری کو سہولیات فراہم کی جائیں تاکہ اربوں روپے کی انڈسٹری ملکی معیشت میں اپنا کردار ادا کر سکے۔

مزید : کامرس