آئی ایم ایف نے پاکستان کی معیشت پر اپنا لیٹر آف انٹینٹ جاری کر دیا

آئی ایم ایف نے پاکستان کی معیشت پر اپنا لیٹر آف انٹینٹ جاری کر دیا

اسلام آباد، دبئی(آن لائن) آئی ایم ایف نے پاکستان کی معیشت پر اپنا لیٹر آف انٹینٹ جاری کر دیا۔ امن وامان کی خراب صورت حال، ٹیکس چوری اور قومی خزانے کو خسارہ پہنچانے والے اداروں کو کمزور معیشت کی بڑی وجہ قراردیا گیا ہے۔انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ کے جاری کردہ لیٹرآف انٹینٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان تعلیم، صحت اور بنیادی ڈھانچے کی مضبوطی پر اخراجات بڑھائے تاکہ ملک میں معاشی سرگرمیاں پروان چڑھ سکیں ، بین الاقوامی ڈونر ایجنسی کے بورڈ نے پاکستانی معیشت کی کمزوری کی بڑی وجہ امن و امان کی ابترصورت حال اور ٹیکس چوری کو قراردیا ہے جبکہ بورڈ نے حکومت پاکستان کو قرضوں کی شرح میں کمی کرنے، محصولات کو بڑھانے اور قومی خزانے کو خسارہ پہنچانے والے اداروں کی تنظیم نو کرنے کی تجویز دی ہے۔بورڈ نے کہا کہ پاکستان کو درپیش سیکیورٹی چیلنجزملک میں سرمایہ کاری کی راہ میں بڑی رکاوٹ ہیں۔پاکستان منی لانڈرنگ اور دہشتگردی کی مالی امداد میں ملوث عناصر کی حوصلہ شکنی کے لئے قانون سازی کرے۔ آئی ایم ایف بورڈ نے حکومت پاکستان کی ٹیکس چھوٹ سے متعلق پالیسیوں کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ ٹیکسوں میں چھوٹ قومی محصولات میں کمی کا باعث بن رہی ہے جبکہ توانائی کے شعبے میں اصلاحات، سبسڈی کے خاتمے اور صوبائی اور وفاقی ٹیکس حکام کے درمیان رابطوں کو بڑھانے پر بھی زور دیا گیا ہیلیٹر اف انٹینٹ میں اسٹیٹ بینک کی خود مختاری بڑھانے اور وزارت خزانہ کا اثر کم کرنے کے مطالبے کو بھی دہرایا گیا ہے جبکہ آئی ایم ایف نے روپے کی قدر میں اضافے کو سراہتے ہوئے کہا کہ گزشتہ دو برسوں میں پاکستانی روپے کی قدر سترہ فیصد بڑھی ہے۔

مزید : کامرس