حکومت کا کے۔الیکڑک کو650 میگاواٹ بجلی فراہم کرنے کا انکشا ف

حکومت کا کے۔الیکڑک کو650 میگاواٹ بجلی فراہم کرنے کا انکشا ف

اسلام آباد(آن لائن)حکومت ایک سال سے بغیر کسی قانونی کور کے قومی گرڈ سے کم نرخوں پر (subsidised )کے ۔الیکٹرک کو 650 میگاواٹ بجلی فراہم کررہی ہے ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق وزارت پانی وبجلی ایک عہدیدار نے بتایاہے کہ قومی ٹرانسمیشن اورڈسپچ کمپنی کی جانب سے سپلائی کا ایک سالہ معاہدہ گزشتہ سال جنوری میں ختم ہوگیا تھا۔انہوں نے کہا کہ اس کے بعد سے حکومت نے نہ تو معاہد ہ کو توسیع دی اور نہ کوئی دیگر انتظا م کیا ۔اور صاف بات یہ ہے کہ کراچی الیکڑک کو 650 میگا واٹ بجلی کی سپلائی غیر قانونی ہے ۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کی تشکیل کردہ کمیٹی نے اپنی ذمہ داری ایک ٹیکنیکل کمیٹی کے سپرد کردیا اس کمیٹی نے چار اجلاس منعقد کئے ہیں تاہم نظر ثانی شدہ پاور پرچیز معاہدے کے نتیجے پر نہیں پہنچی ہے ۔انہوں نے کہا کہ پی پی پی دور حکومت میں قومی مفادات کونسل میں کیاگیا فیصلہ بھی نافذ نہیں کیا گیا ہے جس سے سپلائی کو آدھا کرنے کو کہا گیا تھا تاہم وفاقی حکومت ابھی تک ایسا نہیں کرسکیْ ۔عہدیدار نے کہ بغیر کسی معاہدے کے طویل عرصے تک سنگل میگاواٹ بجلی بیچنے اورخریدنے کی کوئی مثال موجود نہیں ہے۔این ٹی ڈی زرائع کے مطابق کے الیکٹر ک کے خلاف 30 سے 40 ارب روپے بقایا جات ہیں۔پاور پرچیز معاہد ہ26 جنوری2015 کو ختم ہوگیا تھا۔

مزید : کامرس