پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ:عمدہ سوچ ،انقلابی قدم

پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ:عمدہ سوچ ،انقلابی قدم

اچھائی اور نیکی معاشرے میں دکھ اور درد کی پرچھائیوں کو دور کرتے ہوئے ایسے پھیل جاتی ہے، جسے کوئی بھی شخص محسوس کئے بغیر نہیں رہ سکتا۔ ہر دور میں کچھ لوگ اپنے تاریخی کارناموں کی بدولت نسلوں کا مستقبل سنوار جاتے ہیں یہی وہ لوگ ہیں جو تارکیوں کو روشنیوں میں بدل دیتے ہیں۔ 2008 ء میں عوامی خدمت کے جذبے سے سرشار صوبہ پنجاب کے وزیر اعلیٰ محمد شہباز شریف پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ کا آغاز کیا اور سات سال کے عرصے میں آج پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ14 ارب روپے تک پہنچ چکا ہے، جس سے ایک لاکھ سے زائد طالب علم مستفید ہوچکے ہیں اور 2018 تک پیف کا حجم 20 ارب روپے تک پہنچ جائے گا ۔پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ کے قیام کا مقصد غربت کے باعث تعلیم جاری رکھنے سے قاصر باصلاحیت بچوں کو تعلیم کے اعلیٰ وسائل فراہم کرنا تھا تاکہ یہ باصلاحیت نوجوان اپنے ارمانوں کے مطابق معیاری تعلیم حاصل کرکے نہ صرف اپنی زندگیوں کوسنوارسکیں ،بلکہ ملکی ترقی میں بھرپور کردار ادا کرسکیں ۔پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ نے تعلیمی ترقی میں انقلاب برپا کیا جس سے معاشرے میں قابل قدر تبدیلی آرہی ہے اور یہی وہ تبدیلی ہے جس کی قوم کو ضرورت ہے یہ طلبہ علم کی روشنی بانٹتے ہوئے میدان عمل میں آئیں گے تو وطن عزیز کا کونہ کونہ جگمگائے گا۔

پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ (پیف) وزیر اعلیٰ محمد شہباز شریف کی طرف سے شعبہ تعلیم کی ترقی کے لئے اٹھائے گئے اقدامات کی ایسی کڑی ہے جس سے ذہین اور مستحق طالبعلموں کو تعلیمی سرگرمیوں کے حصول میں ان کے خوابوں کی تعبیر ملی ہے، جس کی خاص بات روایات سے ہٹ کر نہ صرف صوبہ پنجاب کے ہونہار طلبہ اس پروگرام سے فیض یاب ہورہے ہیں،بلکہ صوبہ سندھ بلوچستان خیبر پختونخواہ ،گلگت بلتستان ،اسلام آباد،فاٹا اور آزاد کشمیر کے ہزاروں طلبہ بھی یکساں فوائد اٹھا رہے ہیں ۔ بلوچستان حکومت نے بھی اس انقلابی پروگرام کی پیروی کرتے ہوئے صوبے کے ذہین طالب علموں کے لئے اس فنڈ کا اہتمام کیا ہے جسے ملک کے دیگر صوبوں میں بھی رائج کرنا ہوگا تاکہ وطن عزیز کاوسائل سے محروم ہر وہ ذہین اور محنتی طالب علم جو اپنی آنکھوں میں تعلیم یافتہ بننے کا خواب سجائے پھرتا ہے اس کا مستقبل سنور سکے۔یہ ایسا سکالر شپ ہے جس کے لئے کسی اہل ومستحق طالب علم کو سرکاری دفاتر میں درخواست دینے کی ضرورت نہیں بلکہ پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ کی انتظامیہ اپنے ذرائع سے ان طالب علموں سے رابطہ کرتی ہے ۔

طالب علموں کو پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ کی فراہمی کا سلسلہ میٹرک لیول سے شروع ہو ا تھا،اور آج پوسٹ گریجوایٹ سطح کے طالب علم بھی اس فنڈ سے تعلیمی پیاس بجھانے میں مصروف ہیں ۔وہ لوگ جو یہ جاننا چاہتے ہیں کہ حکومت تعلیم کے فروغ کے لئے کیا کر رہی ہے، وہ موجودہ پنجاب حکومت کے پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ کو دیکھ لیں اسے سرخ فیتے اور سیاسی بندشوں سے آزاد کر دیا گیا ہے ۔اس فنڈکی بدولت طالب علموں کو گھروں کی دہلیز پر سکالرشپ پہنچ رہے ہیں۔ پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ نے مشکل ترین حالات میں ہتھیار نہ ڈالتے ہوئے قوم کے قابل بیٹے ،بیٹیوں کے لئے اعلیٰ تعلیم کے دروازے کھولے اور غریب گھرانوں میں آنکھیں کھولنے والے ذہین بچے اس فنڈ کے ذریعے اعلیٰ تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔ وزیر اعلیٰ پنجاب کا قائم کیا گیا پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ آج پاکستان کا سب سے بڑا فنڈ بن چکا ہے جو پنجاب حکومت کا عظیم انقلابی کارنامہ ہے۔ اس فنڈ کی بدولت اب کسی ذہین طالب علم کی امید نہیں ٹوٹے گی اوروہ اپنی تعلیم جاری رکھ سکے گا۔یہی وہ قابل قدر اقدامات ہیں جو ایک فلاحی حکومت اٹھاتی ہے اور ان بے وسیلہ افراد کا خیال رکھتی ہے جو بھرپور ذہنی وجسمانی صلاحتیں رکھتے ہیں ،لیکن وسائل کی مجبوریوں کی وجہ سے آگے نہیں بڑھ سکتے۔

پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ کی فراہمی کے سلسلے میں صوبائی‘ڈویژنل اور ضلعی سطح پر تقریبات بھی منعقد ہوتی رہتی ہیں جن میں وزیر اعلیٰ محمد شہباز شریف ذہین طالب علموں کو وظائف کی تقسیم کے لئے موجود ہوتے ہیں جبکہ ان تقاریب میں ہونہار طالب علموں کے والدین کو بھی مدعو ہوتے ہیں۔ذہین طالب علموں کے والدین پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ کو نوجوانوں کا مستقبل سنوارنے کا بڑا ذریعہ قرار دے رہے ہیں ۔یقیناًپنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ وزیر اعلیٰ محمد شہباز شریف کاانتہائی انقلابی وتعلیم دوست اقدام ہے جس کی بدولت وسائل کی کمی کی وجہ سے کوئی ذہین طالب علم تعلیم جاری رکھنے سے محروم نہیں۔ذہانت کی قدر اور تعلیم کے فروغ سے متعلق پیف کے قیام جیسے اقدامات قوموں کی زندگی میں انقلاب برپا کرتے ہیں اگر ماضی میں شہباز شریف جیسی پالیسی اختیار کی جاتی تو آج ہم علمی ترقی میں مزید آگے ہوتے۔پیف سکالرز کو اپنی قسمت پرفخر ہونا چاہیے ،کیونکہ پاکستان کا مستقبل ان کے ہاتھوں میں ہے اورملک وقوم کو ذہانت اور صلاحیتوں کے بل بوتے پر ہی ترقی کے عروج تک پہنچانا ہے۔

محمد شہباز شریف جب بھی اقتدار میں رہے تعلیم کی ترقی ان کی اولین ترجیحات میں شامل رہی ہے۔ گذشتہ دورکو دیکھ لیں، مشکل حالات میں بھی تعلیم کے لئے خطیر فنڈز مختص کئے اور اس بار بھی طالب علموں کو تعلیمی سہولتوں کی سو فیصد فراہمی کو یقینی بنانے کا ارادہ کئے ہوئے ہیں جس کے لئے دن رات کوشاں ہیں ۔انڈوومنٹ فنڈوزیراعلیٰ پنجاب محمدشہبازشریف کی طرف سے علمی شعبے کے استحکام وترقی کے لئے اٹھائے گئے انقلابی اقدامات کی ایک کڑی ہے جبکہ دیگر ہمہ نوعیت کے منصوبوں میں تعلیمی سہولتوں کو وسعت دینے اور ان کے ثمرات طالب علموں تک پہنچانے کے لئے مانیٹرنگ کے موثر نظام پر عملدرآمدکے علاوہ ذہین طالب علموں میں میرٹ کی بنیادپر لیپ ٹاپس کی شفاف تقسیم ،بورڈز اوریونیورسٹی کی سطح پر ٹاپ پوزیشن ہولڈرز کو نمایاں وممتاز غیر ملکی یونیورسٹیوں کے دوروں کے پروگرام بھی شامل ہیں ،جن سے ان طالب علموں کو عالمی سطح پر علمی تقاضوں سے آشنائی کے علاوہ ان کی حوصلہ افزائی اورآگے بڑھنے کی بھرپور جستجو بھی پیدا ہوتی ہے ۔

وزیراعلیٰ پنجاب محمدشہباز شریف نے پنجاب ایجوکیشنل انڈوومنٹ فنڈ کے ذریعے ملک بھر کے ذہین طالب علموں کو مالی معاونت فراہم کی ہے جو اپنے دل میں اعلیٰ تعلیم کی امنگ تو رکھتے ہیں ،مگر ان کے والدین تعلیمی اخراجات برداشت نہیں کر سکتے ۔یہ فنڈ ایسا ثمر آور درخت ثابت ہوا ہے جس کے پھل سے ذہین اورمستحق طالب علم مستفید ہوتے جا رہے ہیں ۔اور یہ درخت پروان چڑھ رہا ہے اور ہر اس طالبعلم کو پھل دے گا جو اپنی تعلیم جاری رکھنے میں فیسوں کے باعث پریشان ہے۔پیف کی بدولت آج ہر طالب علم مقابلے کی دوڑ میں شریک ہو کر اپنا مستقبل سنوارنے اور وظائف حاصل کرکے خوابوں کی تعبیر حاصل کررہا ہے ۔شعبہ تعلیم میں یہ گرانقدر منصوبہ مستحق طالب علموں کو ان کی تعلیمی منازل کے حصول میں پیش خیمہ ثابت ہوا ہے اور تعلیم کے ذریعے معاشی ترقی کا جو خواب شہباز شریف کی آنکھوں میں دمکتا ہے اس کی تعبیر پوری ہو رہی ہے۔

مزید : کالم

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...