کاسمیٹکس مصنوعات میں حرام جانوروں کی چربی اور تیز کیمیکل کے استعمال کا انکشاف

کاسمیٹکس مصنوعات میں حرام جانوروں کی چربی اور تیز کیمیکل کے استعمال کا ...

لاہور(رپورٹ :دیبا مرزا)دور جدید میں خواتین کے فیشن میں جدت آنے کے ساتھ ساتھ میک اپ میں نت نئی کاسمیٹکس کے استعمال کا رجحا ن بڑھنے لگا ،میک اپ کے نت نئے برانڈ مار کیٹ میں اپنی جگہ آسا نی سے بنا لیتے ہیں لیکن در حقیقت ان کاسمیٹکس میں استعمال ہو نے والے زیادہ تر اجزاء خواتین کی جلد پر مضر اثرات مر تب کر تے ہیں جس میں حرام جا نوروں کی چر بی سمیت تیز کیمیکل اجزاء بھی شا مل ہیں۔ تفصیلات کے مطابق شہر کی تما م بڑی ما رکیٹوں نئے نئے نا موں سے میک اپ اور کاسمیٹکس کی دیگر اشیاء کی بھر مار ہو گئی ،اچھرہ مارکیٹ ،بانو با زار، انا رکلی ،لبرٹی سمیت دیگربازاروں میں ہزاروں رو پے میں ملنے والی اصلی کا سمیٹکس اور میک اپ کا سامان اب چند سو رو پوں میں آسا نی سے دستیاب ہے اور خواتین کو دوکا ندار آسا نی سے بے وقوف بنا کر رو پے بٹور لیتے ہیں لیکن در حقیقت ان گھٹیا اقسام کے میک اپ میں استعمال ہو نے والے اجزاء تو اصل میں خود بہت مضر جلد ہیں ، جو وقتی طور پر تو چہر ے کو خوبصورت بنا دیتے ہیں لیکن چند دنوں کے بعد ہی انکے مضر اثرات چہرے پرواضح نظر آنا شروع ہو جا تے ہیں ۔ اس حوالے سے گفتگو کر تے ہو ئے ما ہرجلد اور بیوٹیشن فجر لطیف نے کہا کہ خواتین میں اب میک اپ کروا نے کے رجحان میں اضا فہ ہوا ہے اب شادی بیاہ کے مو قعوں پر تو دلہن کو پا ر لر سے تیار کروا نا تو عا م ہو تا جارہا ہے لیکن اب تو پارٹی اور چھو ٹی چھو ٹی تقریبات کے لئے بھی خواتین پارلر کا رخ کر نے لگی ہیں، کاسمیٹکیس میں حرام چیزوں کے استعمال کے حوا لے سے با ت کر تے ہو ئے انہوں نے کہا کہ میک اپ میں اور کاسمیٹکس میں یمیکلی اشیاء کا استعمال تو ہو تا ہے تا کہ جلد پر خو بصو رتی نظر آئے لیکن اچھے اور برا نڈڈ کاسمیٹکس میں ان چیزوں کا استعمال نہیں ہو تا ۔ انہوں نے کہا کہ آجکل تو واقعی مار کیٹ میں کافی نا موں کے جعلی میک اپ دستیاب ہیں میک اپ کروا نا خواتین کا شوق ہے اس لئے شوق کو پورا کر نے کے لئے اچھے برانڈز کا استعمال کر یں ور نہ اسکن ایک مر تبہ خراب ہو جا ئے تو ریکو ری بہت مشکل ہے ا نہوں نے کہا کہ ہر بل کاسمیٹکس کا استعمال چہرہ کے لئے فا ئدہ مند ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1