افغانستان ،جلال آباد میں پاکستانی قونصل خانے کے قریب خود کش دھماکہ ،6افراد جاں بحق ،داعش نے ذمہ داری قبول کر لی

افغانستان ،جلال آباد میں پاکستانی قونصل خانے کے قریب خود کش دھماکہ ،6افراد ...

جلال آباد(آن لائن)افغانستان کے شہر جلال آباد میں پاکستان کے قونصل خانے کے نزدیک خود کش دھماکے میں 4افغان اہلکاروں سمیت6افراد جابحق اور 3بچوں سمیت متعدد افراد زخمی ہو گئے ،دھماکے میں کوئی پاکستانی جاں بحق نہیں ہوا ، قونصل خانے کے ارد گرد کا علاقہ سیل کردیا گیا ، افغان سکیورٹی اہلکار فوری طور پر جائے وقوعہ پر پہنچ گئے، زخمیوں کو قریبی ہسپتال منتقل کردیا گیا۔افغان خبررساں ادارے کے مطابق افغانستان کے شہر جلال آباد میں پاکستانی قونصل خانے کے نزدیک خودکش دھماکے میں 4افغان پولیس اہلکاروں سمیت 6افراد جا بحق اور متعدد زخمی ہو گئے ، زخمیوں میں تین بچے بھی شامل ہے ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کرلئے گئے ہیں اور تحقیقات شروع کردی گئی ہے۔پاکستانی قونصل جنرل فرمان اللہ نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ دھماکے میں کوئی پاکستانی شہید یا زخمی نہیں ہوا اور نہ ہی عمارت کو کوئی نقصان پہنچا ہے ، سفار تخانے کا عملہ بھی مکمل طور پر محفوظ رہا ، انہوں نے بتایا کہ دھماکہ سفارت خا نے کی عمارت کے باہر ہوا ہے۔ دھما کے کے بعد پا کستا نی قو نصل خا نے کو بند کر دیا گیا ۔جبکہ افغان صدر اشرف غنی نے وزیراعظم نواز شریف کو فون کر کے سفارتی عملے کیلئے مزید حفاظتی اقدامات کرنے کی یقین دہانی کروائی۔ اس موقع پر نواز شریف نے کہا دہشت گرد دونوں ملکوں کے دشمن ہیں اور اس دہشت گردی کے ناسور کو ختم کرنے کیلئے دونوں ممالک کو کوشش کرنی ہو گی۔ دوسری جا نب ترجمان دفتر خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ افغانستان کے علاقے جلال آباد میں پاکستانی قونصل خانے پر دہشت گردوں کا حملہ قابل مذمت ہے۔ حملے میں سفارتی عملہ محفوظ رہا تاہم کچھ اہلکار شیشے لگنے کے باعث معمولی زخمی ہوئے۔ ترجمان نے کہا کہ افغان حکومت واقعے کی جامع تحقیقات کر کے حملے کے ذمہ داروں کی نشاندہی کرے اور تحقیقات سے حاصل ہونیوالی معلومات کا پاکستان سے تبادلہ بھی کیا جائے۔ترجمان کے مطابق افغان حکومت سے کہا گیا ہے کہ افغانستان میں سفارتی عملے کی حفاظت اور سیکیورٹی یقینی بنائی جائے۔ افغان صدر اشرف غنی، وزیر خارجہ اور قائم مقام وزیر دفاع نے کابل میں پاکستانی سفارتخانے کے ناظم الامور کو ٹیلی فون کر کے قونصل خانے پر حملے پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا اور واقعے کی مکمل تحقیقات کرانے کی یقین دہانی کرائی۔افغان صدر اشرف غنی کا کہنا تھا کہ حملے کے ذمہ داروں کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے۔ غیر ملکی ذرائع ابلاغ کے مطابق پہلے قونصل خانے کے سامنے خودکش دھماکہ ہوا پھر دہشت گردوں نے فائرنگ شروع کر دی۔ تا ہم کسی نے حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی

مزید : صفحہ اول