منیٰ کی جامع منصوبہ بندی کی جائے، 5 امور مدنظر رکھے جائیں،سعودی مجلس شوریٰ

منیٰ کی جامع منصوبہ بندی کی جائے، 5 امور مدنظر رکھے جائیں،سعودی مجلس شوریٰ

جدہ (محمد اکرم اسد) سعودی مجلس شوریٰ نے وزارت حج سے مطالبہ کیا ہے کہ منیٰ کی جامع منصوبہ بندی کی جائے، 5 امور کو مدنظر رکھا جائے، سرحدوں پرنئے حاجی کیمپ جلد از جلد مکمل کئے جائیں۔ اس سلسلے میں متعلقہ اداروں کا تعاون لیا جائے اور شریک کار بنا کر منصوبے پایہ تکمیل تک پہنچائے جائیں۔ اجلاس کی صدارت شیخ ڈاکٹر عبداللہ آل الشیخ نے کی۔ معاون صدر شوریٰ ڈاکٹر یحییٰ الصمصان نے اجلاس کے بعد صحافیوں کو بتایا کہ ارکان شوریٰ مالی سال 1434-35ھ کے حوالے سے وزارت حج کی سالانہ رپورٹ پر بحث کررہے تھے اور اس سلسلے میں حج و آباد کاری و خدمات کمیٹی کے ارکان اپنا نکتہ نظر پیش کررہے تھے۔ کمیٹی کے سربراہ مفرح الزہرانی نے بتایا کہ ارکان شوریٰ نے رپورٹ پر متعدد اعتراضات ریکارڈ کرائے۔ الزہرانی نے کہا کہ منیٰ میں مشاعر مقدسہ کے درمیان ٹرانسپورٹ کو رواں دواں رکھنا ضروری ہے۔ جمرات کو جانے والی سڑکوں میں انتہائی گنجائش پیدا کرنی ہوگی، منیٰ کے اندر رہائش کی گنجائش بڑھانا ہوگی، سرکاری اداروں کے لئے مختص پلاٹس کا رقبہ کم کرنا ہوگا، ہر حاجی کے لئے مختص رقبہ میں اضافہ کرنا ہوگا تاکہ حجاج کرام زیادہ آرام و سکون سے عبادت کرسکیں۔ خدمات کا معیار اور امن و سلامتی کے وسائل کو زیادہ بہتر بنانا ہوگا۔

ڈاکٹر الصمصان نے بھی بتایا کہ شوریٰ نے وزارت حج سے کہا ہے کہ وہ بری سرحدی چوکیوں پر حاجی کیمپ کے منصوبے جلد از جلد مکمل کرے اور ہر سال انہیں جدید خطوط پر استوار کرنے کا اہتمام کرے۔

مزید : علاقائی