صاف پانی کی بلاتعطل فراہمی کمیٹیوں کے ذریعے کی جائے گی، ملک تنویر اسلم اعوان

صاف پانی کی بلاتعطل فراہمی کمیٹیوں کے ذریعے کی جائے گی، ملک تنویر اسلم اعوان

لاہور (پ ر) صوبائی وزیر برائے ہاؤسنگ اربن ڈویلپمنٹ ، مواصلات وتعمیرات ملک تنویر اسلم اعوان نے کہا ہے کہ حکومت پنجاب نے 70ارب کی لاگت سے آئندہ 3برسوں میں 4کروڑ سے زائد افراد کو پینے کے صاف پانی کی آسان رسائی کو یقینی بنانے کے لیے پنجاب صاف پانی پروگرام شروع کیاہے ۔ انہوں نے کہا کہ تجربہ کار ملکی و غیر ملکی ماہرین کی زیر نگرانی سائنسی بنیادوں پر سروے اور جامع منصوبہ بندی کے علاوہ جدید ترین واٹر فلٹریشن پلانٹس کی تنصیب اور پانی کی سپلائی کی غیر فعال سکیموں کی بحالی و تعمیر اور نئے سکیموں کا قیام عمل میں لایا جارہاہے۔ یہ بات انہوں نے پنجاب صاف پانی کمپنی کی سٹیرنگ کمیٹی کے تیسرے اجلاس میں Culster Base Aprroch for Pattoki Project of Saaf Pani کا جائزہ لیتے ہوئے کہی۔اجلاس میں چیئرمین پنجاب صاف پانی کمپنی ورکن صوبائی اسمبلی کاشف پڈھیار،رکن صوبائی اسمبلی امانت اﷲ خان، قاضی عدنان فرید، انجینئرنگ قمر الاسلام کے علاوہ متعلقہ افسران نے شرکت کی۔ صوبائی وزیر نے کہاکہ اب پانی کی شراکتی منصوبہ بندی انتظام اور بلاتعطل فراہمی مقامی افراد کی جانب سے تشکیل کردہ صاف پانی کمیٹیوں کے ذریعے کی جائے گی۔ انہو ں نے کہا کہ اس منصوبہ کی تکمیل سے عوام کو WHOکے طے شدہ معیار مطابق پینے کا صاف پانی فراہم کیا جاسکے گا جو Arsenic, ، Flouride، Nitrate، Hardness سے پاک ہوگا۔

اجلاس کو مزید بتایا گیا کہ پتوکی تحصیل کی 2015کے سروے مطابق آبادی 9لاکھ 39ہزار سے زائد ہے جبکہ 2035تک یہ آبادی 15لاکھ سے تجاوز کرجائے گی۔ Culster Base Aprroch for Pattoki Project of Saaf Pani 2035 تک کی ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے ڈیزائن کیا گیا۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ منصوبوں کی تکمیل میں علاقے کی ضرورت کو مدنظر رکھاجائے اور تخمینہ جات کا چارٹر اکاؤنٹ کے ساتھ مل کر سروے کروایا جائے تاکہ آنے والے سالوں میں ایک مکمل نیٹ ورک قائم ہوسکے۔صوبائی وزیر نے کہا کہ جن علاقوں میں پانی کی سطح اچھے لیول پر ہے وہاں ٹیوب ویل کی استعداد کار بڑھائی جائے اور ایک Culster کو دوسرے Culster سے جوڑا جائے تاکہ کسی بھی قسم کی فنی خرابی کی صورت میں متبادل ذرائع سے مدد لی جاسکے۔ صوبائی وزیر کو بتایا گیا کہ اس منصوبہ کے تحت پتوکی کے 188دیہات کی آبادی کے لیے 317سہولت مراکز کا قیام بھی عمل میں لایا جارہاہے۔

مزید : علاقائی