بداخلاقی کا شکار طالبہ نے مرکزی ملزم سے رابطوں کا اعتراف کر لیا

بداخلاقی کا شکار طالبہ نے مرکزی ملزم سے رابطوں کا اعتراف کر لیا

لاہور(نامہ نگار)اجتماعی بداخلاقی کا نشانہ بننے والی 14سالہ طالبہ نے عدالت میں اپنابیان قلمبند کرواتے ہوئے ملزمان سے رابطوں کا اعتراف کرلیا۔اجتماعی بداخلاقی کا نشانہ بننے والی لڑکی بینش نے جوڈیشل مجسٹریٹ کے سامنے اپنا بیان قلمبند کراویا جس میں موقف اختیار کیا گیا کہ اس کے ملزمان سے تعلقات تھے اور وہ اس کے ساتھ بداخلاقی کرنے والے تمام ملزمان کو بھی جانتی ہے۔ متاثرہ لڑکی نے اپنے بیان میں مزیدکہا کہ مرکزی ملزم عدنان ثنااللہ سے موبائل فون پر رابطہ تھا ،ایک دن اس نے سالگرہ کا تحفہ دینے کے لئے بلایا اورایک فلیٹ پرلے جاتے ہوئے راستے سے شراب کی بوتل خریدی جبکہ فلیٹ پرپہلے سے اس کے 3 دوست بلال، حارث اورماجد بھی موجود تھے جنہوں نے اسے اجتماعی بداخلاقی کا نشانہ بنایا۔دوسری جانب متاثرہ لڑکی کی والدہ کا کہنا تھا کہ ان کی بیٹی کے ساتھ ظلم ہوا ہے، ہمیں انصاف چاہیے اور ملزمان کو کیفرکردار تک پہنچا کر ہی دم لیں گے۔

اعتراف

مزید : صفحہ آخر