جکارتہ حملوں کی مذمت ، مولانا مسعود اظہر کی گرفتاری سے لاعلم، افغان سفیر کے الزامات بے بنیاد ہیں، 15 جنوری کو پاک بھارت سیکرٹری خارجہ مذاکرات نہیں ہونگے: ترجمان دفتر خارجہ

جکارتہ حملوں کی مذمت ، مولانا مسعود اظہر کی گرفتاری سے لاعلم، افغان سفیر کے ...
جکارتہ حملوں کی مذمت ، مولانا مسعود اظہر کی گرفتاری سے لاعلم، افغان سفیر کے الزامات بے بنیاد ہیں، 15 جنوری کو پاک بھارت سیکرٹری خارجہ مذاکرات نہیں ہونگے: ترجمان دفتر خارجہ

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) ترجمان دفتر خارجہ قاضی خلیل اللہ نے کہا ہے کہ جکارتہ میں اقوام متحدہ کے دفتر پر حملوں کی مذمت کرتے ہیں، مولانا مسعود اظہر کی گرفتاری کا علم نہیں، افغان سفیر کے داعش کے حوالے سے الزامات بے بنیاد ہیں، 15 جنوری کو پاک بھارت سیکرٹری خارجہ مذاکرات نہیں ہونگے۔

میڈیا کو ہفتہ وار بریفنگ دیتے ہوئے ترجمان دفتر خارجہ قاضی خلیل اللہ کا کہنا تھا کہ جکارتہ میں اقوام متحدہ کے دفتر پر حملے کی مذمت کرتے ہیں، پاکستان ہر قسم کی دہشتگردی کے خلاف ہے ۔

پاک بھارت سیکرٹری خارجہ مذاکرات کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ قومی سلامتی کے مشیروں کی پیرس میں ہونے والی ملاقات کا علم نہیں، پاک بھارت سیکرٹری خارجہ کے 15 جنوری کو ہونے والے مذاکرات منسوخ کردیے گئے ہیں تاہم ملاقات کی نئی تاریخ کیلئے رابطے میں ہیں اور نئی تاریخ طے ہونے کے بعد بتادیا جائے گا۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کالعدم جیش محمد کے سربراہ مولانا مسعود اظہر کی گرفتاری کے حوالے سے لاعلمی کا اظہار کیا ۔

افغان سفیر کے بدھ کے روز کے بیان کے ردعمل میں جس میں انہوں نے الزام لگایا تھا کہ پاکستان سے لوگ افغانستان میں جاکر داعش میں شامل ہورہے ہیں ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ افغان حکومت نے اب تک جلال آبادحملے کی رپورٹ نہیں دی۔ افغان سفیر کے پاکستان سے افغانستان میں جا کر لوگوں کے داعش میں شامل ہونے کے الزامات بے بنیاد ہیں، ایسے بے بنیاد الزامات سے گریز کرنا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ ایران ہمارا قریبی ہمسایہ ملک ہے اور اس کے ساتھ تعلقات میں مزید بہتری کے خواہاں ہیں۔پاک چین اقتصادی راہداری کے تمام مسائل پر چین سے رابطے میں ہیں۔

مزید : قومی /اہم خبریں

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...