ڈسکہ واقعہ کا مجرم کیفر کردار کو پہنچ گیا، 4 بار موت، 30 سال قید بامشقت، 8 لاکھ روپے جرمانہ کی سزا سنادی گئی

ڈسکہ واقعہ کا مجرم کیفر کردار کو پہنچ گیا، 4 بار موت، 30 سال قید بامشقت، 8 لاکھ ...
ڈسکہ واقعہ کا مجرم کیفر کردار کو پہنچ گیا، 4 بار موت، 30 سال قید بامشقت، 8 لاکھ روپے جرمانہ کی سزا سنادی گئی

  

ڈسکہ(مانیٹرنگ ڈیسک)انسداد دہشتگردی عدالت نے ڈسکہ واقعے کا فیصلہ سناتے ہوئے سابق ایس ایچ اوتھانہ سٹی ڈسکہ شہزاد وڑائچ کو چار بار سزائے موت کا حکم سنا دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سابق صدر ڈسکہ بار رانا خالد عباس ایڈووکیٹ اور عرفان چوہدری کے قتل کیس کی سماعت انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت کے جج چوہدری امتیاز نے سنٹرل جیل کے کوٹ روم میں کی ۔ سماعت کے دوران جرم ثابت ہونے پر عدالت نے سابق ایس ایچ او شہزاد وڑائچ کو صدر بار سمیت 2 وکلا کے قتل کے جرم میں 4 بار سزائے موت کا حکم سنادیا ہے جبکہ مقتولین کے ورثاءکو 4 لاکھ روپے دیت اور 4 لاکھ روپے جرمانہ ادا کرنے کا حکم بھی دیا ہے ۔

علاوہ ازیں مجرم نے ایک وکیل سمیت تین افراد کو زخمی بھی کیا تھا جس پر عدالت نے مجرم کو تیس سال قید بامشقت کا حکم سنادیا ہے ۔

مزید : گوجرانوالہ /اہم خبریں