عشق رسول ﷺ میں ہاتھ کو جسم سے الگ کرتے ہوئے کسی قسم کی تکلیف محسوس نہیں ہوئی :محمدانور

عشق رسول ﷺ میں ہاتھ کو جسم سے الگ کرتے ہوئے کسی قسم کی تکلیف محسوس نہیں ہوئی ...
عشق رسول ﷺ میں ہاتھ کو جسم سے الگ کرتے ہوئے کسی قسم کی تکلیف محسوس نہیں ہوئی :محمدانور

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)عشق رسولﷺمیں ہاتھ کو کاٹنے والے انور علی نے کہاہے کہ جب اس نے اپنے ہاتھ کو اپنے جسم سے الگ کیا تو اسے بالکل تکلیف محسوس نہیں ہوئی ۔دنیا نیوز کے پروگرام نقطہ نظر میں گفتگو کرتے ہوئے محمدانور کا کہناتھا کہ امام صاحب نے دوران خطاب کہا تھا کہ جو نبی کریم ﷺ سے محبت نہیں کرتا وہ ہاتھ کھڑا کرے جس پر انور  نے غیر دانستہ طور پر ہاتھ کھڑا کر دیا ،انور کا کہناتھا کہ جب اس نے ہاتھ کھڑا کیا تو اسے معلوم نہیں تھا کہ اس نے ہاتھ آپ ﷺ کی مخالفت میں اٹھایاہے ۔

انور علی نے کہا کہ وہ محفل سے اٹھ کر گھر چلا گیا اور اس نے گھر جا کر نبی کریم ﷺ کی مخالفت میں کھڑے ہونے والے ہاتھ کوٹوکے کے وار سے جسم سے الگ کر دیا اور اسے ایسا کرنے پر کسی قسم کی تکلیف محسو س نہیں ہو ئی ۔انور کا کہناتھا کہ اس نے ہاتھ کاٹنے کے بعد اسے پلیٹ میں رکھ کر امام صاحب کے سامنے پیش کیا اور محفل میں آنے تمام افراد کو بھی بتایا۔ایک سوا ل کے جواب میں انور کا کہناتھا کہ جب اس سے اس کے گاﺅں والے پوچھتے ہیں کہ اس نے ہاتھ کیوں کاٹا تو وہ سب کو یہی جواب دیتاہے ۔

مزید : قومی /اہم خبریں