ہائی کورٹ نے تھانیدار کوبھری عدالت میں ڈانٹنے پر وکیل کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کردیا

ہائی کورٹ نے تھانیدار کوبھری عدالت میں ڈانٹنے پر وکیل کو توہین عدالت کا نوٹس ...
ہائی کورٹ نے تھانیدار کوبھری عدالت میں ڈانٹنے پر وکیل کو توہین عدالت کا نوٹس جاری کردیا

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے مجرم کی عدم گرفتاری کو تھانیدار کی "حرامزدگی "قرار دینے اور اس کی بھری عدالت میں ڈانٹ ڈپٹ کرنے پر ہائی کورٹ بار کے سابق نائب صدر میاں محمد اسلم کو توہین عدالت کے تحت شوکاز نوٹس جاری کردیئے ۔سکندر نامی شہری نے میاں محمد اسلم ایڈووکیٹ کی وساطت سے درخواست دائر کررکھی ہے کہ اس کے بیٹے کو سلیم نامی شہری نے قتل کردیا تھا اسے ٹرائل کورٹ نے عمر قید کی سزا سنائی مجرم کی اپیل بھی ہائی کورٹ سے مسترد ہوچکی ہے اس کے باوجود تھانہ صدر گوجرہ کی پولیس اسے گرفتار نہیں کررہی ۔عدالت میں موجود متعلقہ تفتیشی افسر سب انسپکٹر سرور کی طرف اشارہ کرکے میاں اسلم ایڈووکیٹ نے کہا کہ ساری حرامزدگی اس کی ہے ،یہ مجرم پارٹی سے ملا ہوا ہے ،اسی ایف آئی آر کی تفتیش میں بددیانتی کا مظاہرہ کرنے پر یہ نوکری سے برطرف بھی ہوگیا تھا ،اب پھر اسی تھانے میں آکر تعینات ہوگیا ہے ، یہ تھانیدار مجرم کے بھائی کی گاڑی میں لاہورآیا ہے ،میاں اسلم نے تھانیدار کو براہ راست مخاطب کرکے اسے ڈانٹ ڈپٹ بھی کی جس کا عدالت نے سخت نوٹس لیا اور اسے عدالتی کارروائی میں مداخلت ،عدالتی آداب کے منافی اقدام اور بادی النظر میں توہین عدالت قرار دیتے ہوئے میاں اسلم کو شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے وضاحت طلب کرلی ہے ۔

مزید : لاہور

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...