بارشیں نہ ہونے کی وجہ سے بلوچستان میں خشک سالی ہر گزرتے روز شدت اختیار کرتی جارہی ہے:میر ضیاء اللہ لانگو 

بارشیں نہ ہونے کی وجہ سے بلوچستان میں خشک سالی ہر گزرتے روز شدت اختیار کرتی ...
بارشیں نہ ہونے کی وجہ سے بلوچستان میں خشک سالی ہر گزرتے روز شدت اختیار کرتی جارہی ہے:میر ضیاء اللہ لانگو 

  

کوئٹہ(ڈیلی پاکستان آن لائن)بلوچستان کے  وزیرداخلہ  میر ضیاء اللہ لانگو نے  کہا ہے کہ بارشیں نا ہونے کی وجہ سے بلوچستان میں خشک سالی ہر گزرتے روز شدت اختیار کرتی جارہی ہے، متاثرہ علاقوں میں رہنے والوں کے جان و مال، زراعت اور مویشیوں پر اسکے منفی اثرات پڑ رہے ہیں، بچے غزائی قلت کا شکار ہوتے جا رہے ہیں، لوگ ان علاقوں سے نقل مکانی کرنے پر مجبور ہو چکے ہیں، جس کی وجہ سے انسانی بحران پیدا ہونے کا خدشہ ہے ۔

نجی ٹی وی کے مطابق صوبائی وزیر میر ضیاء اللہ لانگو نے کہا کہ پی ڈی ایم اے اپنے تمام دستیاب وسائل متاثرین کی بحالی کے لئے بروئے کار لا رہی ہے لیکن وسعت کے اعتبار سے طول و عرض میں پھیلے بلوچستان میں انہیں متاثرین کی بحالی کے لئے جنگی بنیادوں پر اضافی وسائل درکار ہونگے جس کے لیے وہ 18 جنوری کو وفاقی دارالحکومت میں اس حوالے سے ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ میں شرکت کرتے ہوئے وفاقی حکومت اور چیئرمین پی ڈی ایم اے سے خشک سالی متاثرین کی امداد و بحالی کے لئے اضافی مالی معاونت کا مطالبہ کرینگے ۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ صوبہ میں خشک سالی سے 20 اضلاع متاثر ہوئے ہیں جن کو زیادہ سے زیادہ امداد اور ریلیف پہنچایا جارہا ہے، امدادی سامان میں اشیائے خورد و نوش، سردی سے بچنے کے لئے کمبل، ٹینٹ، ادویات، مال مویشیوں کے لئے چارہ، پانی وغیرہ شامل ہیں۔

مزید : علاقائی /بلوچستان /کوئٹہ