وہیکل ویری فیکیشن سسٹم کے ذریعے 5 لاکھ گاڑیوں کی چیکنگ

وہیکل ویری فیکیشن سسٹم کے ذریعے 5 لاکھ گاڑیوں کی چیکنگ

پشاور (کرائمز رپورٹر) انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختونخوا صلاح الدین خان محسود کی خصوصی ہدایت پر پولیس نے گذشتہ سال صوبہ بھر میں وہیکل ویریفیکیشن سسٹم کے ذریعے لاکھوں گاڑیوں کا ریکارڈ چیک کرکے 137 چوری شدہ گاڑیوں کو برآمد کرلیا۔ تفصیلات کے مطابق حکومتی اصلاحاتی ایجنڈے کے تحت خیبر پختونخوا پولیس جرائم پیشہ افراد کو قانون کے شکنجے میں لانے کے لیے جدید انفارمیشن ٹیکنالوجی کا استعمال کر رہا ہے۔ اس مقصد کے لیے آئی جی پی کی ہدایت پر صوبہ بھر کے پولیس کو297 عدد نئے سموں کا اجراء کیا گیا ہے۔ ان سموں کے ذریعے صوبہ بھر میں گذشتہ سال 55,32,474 گاڑیوں کا ریکارڈ چیک کیا گیاجن میں ضلع پشاور کوفراہم کردہ 31سموں کے ذریعے 901,178 گاڑیوں کو چیک کرکے 45چوری شدہ گاڑیوں کو برآمد کیا۔ اسی طرح مردان نے20 سموں کے ذریعے 1,71,865گاڑیوں کو چیک کرکے 28 سرقہ شدہ، چارسدہ نے 16 سموں کے ذریعے 130,529 گاڑیوں کو چیک کرکے 11 چوری شدہ، نوشہرہ نے 20 سموں کے ذریعے 712,696 گاڑیوں کو چیک کرکے 9 چوری شدہ گاڑیوں ، صوابی نے 16 سموں کے ذریعے 415,035 گاڑیوں کو چیک کرکے 7 چوری شدہ گاڑیوں ، سوات نے 12 سموں کے ذریعے 184,444 گاڑیوں کو چیک کرکے 5 چوری شدہ گاڑیوں ، بونیر نے 3 سموں کے ذریعے 108,906گاڑیوں کو چیک کرکے 8 چوری شدہ گاڑیوں کو برآمد کیا۔ اسی طرح شانگلہ نے 3سموں کے ذریعے245,741گاڑیوں کو چیک کرکے 4چوری شدہ گاڑیوں، دیر لوئر نے15سموں کے ذریعے 637,387گاڑیوں کو چیک کرکے4چوری شدہ گاڑیوں، دیر آپر نے 9سموں کے ذریعے 261,615 گاڑیوں کو چیک کرکے 4چوری شدہ گاڑیوں، چترال نے 13سموں کے ذریعے 76,241گاڑیوں کو چیک کرکے 2چوری شدہ گاڑیوں ، ایبٹ آباد نے 18سموں کے ذریعے 536,747 گاڑیوں کو چیک کرکے 2چوری شدہ گاڑیوں، ہری پور نے 25سموں کے ذریعے 126,629 گاڑیوں کو چیک کرکے 2چوری شدہ گاڑیوں، مانسہرہ نے 14سموں کے ذریعے 74,150 گاڑیوں کو چیک کرکے ایک چوری شدہ گاڑی، بٹگرام نے 8سموں کے ذریعے 36,699 گاڑیوں کو چیک کرکے 1چوری شدہ گاڑی، تور غر نے 2سموں کے ذریعے 899 گاڑیوں کو چیک کرکے ایک چوری شدہ گاڑی،کوہستان نے 2سموں کے ذریعے 1429 گاڑیوں کو چیک کرکے ایک چوری شدہ گاڑی اور ڈی آئی خان 20سموں کے ذریعے315,188 گاڑیوں کو چیک کرکے 2چوری شدہ گاڑیوں کو برآمد کیا۔اس نئے نظام کے تحت تمام چوری شدہ گاڑیوں کا کمپیوٹرائزڈ ریکارڈ تمام پولیس اسٹیشنوں ، پولیس پوسٹوں اور سنیپ چیکنگ پوائنٹس پر فراہم کردیا گیا ہے جو کہ وہیکل ویریفیکیشن سسٹم (VVS) کے ذریعے دستیاب ہے۔ پولیس چیک پوسٹوں/ناکہ بندیوں پر تعینات عملہ موبائل کا بٹن دبا کر کسی گاڑی کی تصدیق آن لائن کرتا ہے۔ اس نظام کے ذریعے تمام ڈیٹا الیکٹرانک /ڈیجیٹل فارمیٹ میں تبدیل ہو چکاہے اور اس ریکارڈ تک تمام متعلقہ افراد اور اہلکاروں کو ایک کلک کے ذریعے رسائی حاصل ہے۔ اسی طرح مقدمات سے متعلق تفتیشی افسران کو فیصلہ سازی کے لیے اہم معلومات کی دستیابی کو یقینی بناتا ہے۔ جرائم کی روک تھام، امن وامان کی بحالی اور دیگرانتظامی معاملات کے لیے کمپیوٹر کے استعمال کو یقینی بنانا ہے۔ اس سسٹم کے ذریعے صوبے کے تمام اضلاع اور ریجنل پولیس دفاتر کو ایک دوسرے کے ساتھ منسلک کردیاگیا ہے اور اُن کے مابین اہم معلومات کی بروقت ترسیل اور تبادلے کو یقینی بناتا ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر