آبی وسائل محفوظ بنانے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر کا م کرنے کی ضرورت ہے : راولپنڈی چیمبر

آبی وسائل محفوظ بنانے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر کا م کرنے کی ضرورت ہے : ...

راولپنڈی (کامرس ڈیسک) پانی کے وسائل محفوظ بنانے کے لیے ہنگامی بنیادوں پر کام کرنے کی ضرورت ہے، چھوٹے اور بڑے آبی ذخائر بنانا ہو ں گے۔ تحقیقاتی رپورٹس کے مطابق پاکستان میں اگلے دس برس میں خشک سالی کا سامنا ہو سکتا ہے۔ زیر زمین پانی کی سطح خطرناک حد تک گر چکی ہے۔فوری اقدامات کرنا ہوں گے۔ ان خیالات کا اظہار راولپنڈی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر محمد بدر ہارون نے قائمہ کمیٹی برائے واٹر ریسورسز کے جلاس سے خطاب میں کیا ۔ اجلاس میں ملک بھر میں خاص طور پر راولپنڈی میں پانی کی قلت، زیر زمین پانی کی سطح کا گرنا، پانی کا بے دریغ استعمال، بارش کے پانی کو محفوظ بنانے، زیرزمین پانی کی ری چارجنگ اور آبپاشی کے جدید طریقوں ، ڈرپ اریگیشن پر تفصیل سے تبادلہ خیال کیا گیا اس موقع پر گروپ لیڈر سہیل الطاف ، نائب صدر فیاض قریشی، سابق صدور، چیئرمین قائمہ کمیٹی طلعت محمود اعوان، کمیٹی کے اراکین اور چیمبر ممبران کی ایک کثیر تعداد بھی موجود تھی۔ گروپ لیڈر سہیل الطاف نے اپنے خطاب میں کہا کہ چیمبر کے پلیٹ فارم سے ہر قسم کا تعاون، راہنمائی، اور معاونت کی جائے گی۔ چیمبر نے سپریم کورٹ اوروزیراعظم دیامر بھاشا و مہمند ڈیم فنڈ میں پچاس لاکھ کا عطیہ بھی دیا ہے ۔ چیئرمین کمیٹی طلعت محمود اعوان نے ایوان کو بتایا کہ لوگوں کو پانی محفوظ کرنے، کفایت شعاری، گھروں میں پانی کے بے استعمال روکنے، پانی کے میٹر لگوانے اور بارش کے پانی کو قابل استعمال بنانے کے حوالے سے جلد ہی ایک آگاہی مہم شروع کی جائے گی۔ شہر میں بینرز اور معلوماتی پمفلٹ تقسیم کیے جائیں گے۔ آر ڈی اے اور کینٹ حکام کے ساتھ مل کر واٹر فلٹریشن پلانٹس کی مرمت اور تنصیب کی جائے گی۔انہوں نے شرکاء کی جانب سے آبی وسائل کی تعمیر، واٹر سپلائی، پانی کے محفوظ استعمال کے حوالے سے تجاویز کا خیر مقدم بھی کیا۔

مزید : کامرس