بیرون ممالک تعینات کمرشل قونصلرزکی کارکردگی مایوس کن

بیرون ممالک تعینات کمرشل قونصلرزکی کارکردگی مایوس کن

اسلام آباد ( آن لائن ) بیرون ممالک تعینات پاکستانی کمرشل قونصلرز قومی خزانے کے اربوں روپے خرچ کرنے کے باوجود پاکستانی مصنوعات کی مانگ بڑھانے کیلئے کام نہ کرسکے، شماریات ڈویژن کے جانب سے جاری اعداد وشمار کے مطابق کمرشل قونصلرز کی کارکردگی گزشتہ پانچ سالوں میں مایوس کن رہی ، شماریات کی جانب سے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق سال 2013-2018 کے دوران پاکستان نے درآمدات ، برآمدات سے 20کروڑ 65لاکھ ملین روپے زیادہ کی گئی ، جبکہ بیلنس آف ٹریڈ کروڑوں ملین روپے کم رہا ، تفصیلات کے مطابق گزشتہ پانچ سے دوران پاکستان نے برآمدا ت کی نسبت 206493833.5ملین روپے کی زیادہ درآمدات کی گئی ، جبکہ پاکستان کی درآمدات 216168038.6ملین روپے جبکہ برآمدات 9674205.1 ملین روپے تھیں۔بیرونی ممالک میں تعینات پاکستانی سفارتکاروں نے گزشتہ سالوں کے دوران قومی خزانے سے اربوں روپے خرچ کیے گئے تاہم سفارتکار پاکستان بیرونی ممالک میں پاکستانی مصنوعات کی مانگ میں اضافہ نہ کرسکے ، شماریات ڈویژن کی جانب سے جاری کردہ ہوشربااعدادوشمار سے اندازہ ہوتا ہے کہ کمرشل کونسلرز نے ’’میڈ ان پاکستان ‘‘ کے لوگو پر کوئی کام نہیں کیا۔ حال ہی میں جاری کردہ اعداوشمار کے مطابق سال 2013-14میں بیلنس آف ٹریڈ 20لاکھ ملین روپے سے زیاد ہ کم رہا ، سال 2014-15کے دوران منفی22لاکھ ملین روپے ،سال 2015-16ء میں 25لاکھ ملین روپے ، سال 2016-17ء میں 34لاکھ ملین روپے اور گزشتہ سال 2017-18ء کے دوران 41لاکھ ملین روپے سے زیاد ہ منفی میں رہا۔

کمرشل قونصلرز

مزید : علاقائی