فوڈ اتھارٹی کی کارروائی ، 5ہزار مضر صحت دودھ تلف کر دیا

فوڈ اتھارٹی کی کارروائی ، 5ہزار مضر صحت دودھ تلف کر دیا

لاہور( سٹی رپورٹر) ڈائریکٹر جنرل فوڈ اتھارٹی کیپٹن (ر) محمد عثمان کی ہدایت پر ڈیری سیفٹی ٹیموں نے شہروں کے داخلی اور خارجی راستوں پر ناکہ بندی کر کے 4 ہزار 915 لیٹر مضر صحت دودھ ضائع کر دیا۔گزشتہ روز صوبہ بھر میں 1544 گاڑیوں میں موجود 1 لاکھ 88ہزار 961 لیٹر دودھ کے موقع پر ٹیسٹ کیے گئے۔ڈی جی فوڈ اتھارٹی کے مطابق لاہور زون میں769، راولپنڈی 414، ملتان 273 اور مظفر گڑھ زون میں 88 گاڑیوں کو چیک کیا گیا۔ضائع کیے گئے دودھ میں مقدار اور گاڑھاپن بڑھانے والے مضر صحت کیمیکل، پاؤڈر، یوریا اور پانی کی ملاوٹ پائی گئی۔ ڈی جی فوڈ اتھارٹی کے مطابق دور دراز کے علاقوں میں جعلی دود ھ تیا ر کر کے شہروں میں سپلائی کے لیے لایا جا رہا تھا۔کیپٹن (ر) محمد عثمان نے کہا کہ ملاوٹی دودھ کا استعمال بچوں اوربڑوں میں متعدد بیماریوں کا باعث بنتا ہے۔پنجاب فوڈ اتھارٹی کی مسلسل اور کڑی نگرانی سے ناقص دودھ کی سپلائی میں واضح کمی خوش آئندہے۔انہوں نے کہا کہ دودھ میں ملاوٹ کے خاتمے کا موثر حل جدید ممالک کی طرح پاسچرائزیشن قانون کو لاگو کرنا ہے۔جعلی اور ناقص دود ھ کے مکمل خاتمے کے لیے پاسچرائزیشن کی قانون سازی کر چکے ہیں۔2022 تک عملی کام مکمل ہونے پر کھلا دودھ مکمل بند اورصرف پاسچرائزڈ دودھ ہی دستیاب ہو گا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1