فوجی عدالتوں کو توسیع نہ ملی تو دہشتگردی پلٹ آئیگی، طاہر القادری

فوجی عدالتوں کو توسیع نہ ملی تو دہشتگردی پلٹ آئیگی، طاہر القادری

لاہور (آن لائن)قائد تحریک منہاج القرآن و سربراہ پی اے ٹی ڈاکٹر محمد طاہر القادری نے کہا ہے کہ فوجی عدالتوں کے فیصلوں سے دہشتگردوں کی کمر ٹوٹی،تو سیع نہ ملی تو دہشتگردی پلٹ آئیگی۔چار سال میں’’ سویلین سائیڈ‘‘ سے دہشتگردی کے خاتمے کیلئے مطلوبہ اقدامات نظر نہیں آئے چار سال سے قومی ایکشن پلان فائلوں میں بند پڑا ہے،پارلیمانی جماعتیں دہشتگردوں کے خلاف پارلیمنٹ میں ایک پیج پر نہ آئیں تو اسکا نا قابل تلافی نقصان ہو گا۔جنوری 2014 میں انتخابی اصلاحات کیلئے لانگ مارچ کیا، پوری قوم کی توجہ دھاندلی زدہ نظام کی طرف مبذول کروائی سوالات آج بھی موجود ہیں۔روپے پیسے کے عمل دخل بڑھ جانے اور عوامی رائے کو بلڈوز کرنے کے انتخابی کلچر کی وجہ سے پاکستان کی جمہوریت آج بھی 141 ویں نمبر پر ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکزی سیکرٹریٹ میں خیبر پختونخواہ کے صوبائی،ضلعی اور تحصیلی عہدیداروں سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔قائد تحریک منہاج القرآن سے پشاور،مانسہرہ،کوہاٹ،لکی مروت،ہری پور،نوشہرہ،اپر دیر تنظیمات کے عہدیداروں نے ملاقات کی۔منہاج القرآن ویمن لیگ اندرون سندھ سے بھی خواتین عہدیداروں نے مرکزی صدر فرح ناز کی قیادت میں ڈاکٹر محمد طاہر القادری سے ملاقات کی۔ملاقات کرنیوالوں میں ڈاکٹر نگہت،ڈاکٹر طوبیٰ حسن،مہین شامل تھیں ۔ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ برطانوی جریدے کی ایک حالیہ رپو رٹ کے مطابق دنیا کے صرف 20ممالک میں مثالی جمہوریت موجود ہے،پاکستان کا نمبر 112واں جبکہ بھارت 41 ویں نمبر پر ہے۔انہوں نے کہاکہ جب تک انتخابی نظام آئین اور عوام دوست نہیں ہو گا مثالی جمہوری ادارے قائم نہیں ہو سکیں گے۔

مزید : صفحہ آخر