امریکہ چاہتا ہے اسلام آباد اور واشنگٹن کا براہ را ست رابطہ ہو: کیمران منٹر

امریکہ چاہتا ہے اسلام آباد اور واشنگٹن کا براہ را ست رابطہ ہو: کیمران منٹر

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک )سابق امریکی سفیر کیمرون منٹر نے کہا ہے کہ امریکا چاہتا ہے پاکستان کے لوگ ہرشعبے میں ترقی کریں، چاہتے ہیں کہ براہ راست اسلام آباد اور واشنگٹن کا رابطہ ہو،امریکا اور پاکستان کے تعلقات اتنے مضبوط ہوں کہ رکاوٹیں بے معنی ہوں۔سابق امریکی سفیر نے نجی ہوٹل میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امریکا بھارت،روس اور چائنہ کے ساتھ بھی بات چیت میں مصروف ہے، امریکا بات چیت کے ذریعے باہمی معاملات حل کرنے کا خواہش مند ہے،امریکا کا صرف اور صرف ایک مفاد ہے کہ ہر ملک ترقی کرے۔ پاکستان اورامریکا کے تعلقات میں اتارچڑھاؤآتے رہتے ہیں، سیاسی معاملات بہتر نہ ہونے کی وجہ سے پاکستان کے معاملات بہتر نہیں،بھارت اور پاکستان کے ساتھ ہمیں معاملات اچھے رکھنے پڑتے ہیں۔کراچی میں کونسل آن فارن ریلیشنز میں اظہار خیال کرتے ہوئے سابق امریکی سفیر کیمرون منٹر نے مزید کہا کہ پاکستان نے امریکا سے ملنے والے تعلیمی فنڈز کا درست استعمال نہیں کیا اور اسے امریکی فنڈز ایمانداری سے استعمال کرنے چاہئیں۔ امریکا چاہتا ہے کہ پاکستان کے ساتھ تعلقات مضبوط رہیں، اسی لیے ہمیشہ پاکستان کیساتھ تعاون کیا اور تعلیم کے فروغ کے لیے کافی سرمایہ کاری کررہا ہے، تاہم دونوں ممالک کے تعلقات میں اتار چڑھاؤ آتا رہتا ہے۔ پرویز مشرف دور میں پاکستان نے دہشت گردی کی روک تھام کے لیے پیسے لیے، امریکا نے بلوچستان میں تعلیم کے لیے کافی پیسہ دیا ہے، سندھ کو بھی تعلیم کی مد میں کافی فنڈز دیے گئے لیکن سارا پیسہ درست انداز میں استعمال نہیں ہوا، پاکستان نے کئی مواقعوں پر اپنا اعتماد کھویا، اس کی زیادہ توجہ ترقیاتی کاموں کی جانب ہوتی ہے، لیکن اب وقت ہے کہ وہ گڈ گورننس (اچھی حکمرانی) پر کام کرے، اسے ایماندارانہ طور پر امریکہ کی جانب سے دیے جانے والے فنڈز خرچ کرنے چاہئیں۔کیمرون منٹر نے کہا کہ اسلام آباد اور واشگٹن کا براہ راست رابطہ اور تعلقات اتنے مضبوط ہوں کہ درمیان میں آنے والی رکاوٹیں بے معنی ہوں، امریکا بھارت ، روس اور چین کے ساتھ بھی رابطوں میں مصروف ہے اور باہمی بات چیت سے معاملات حل کرنے کا خواہش مند ہے۔

کیمرون منٹر

مزید : صفحہ اول