اتر پردیش میں بہو جن اور سماج وادی پارٹی کا اتحاد ،مودی کے لیے خطرہ

اتر پردیش میں بہو جن اور سماج وادی پارٹی کا اتحاد ،مودی کے لیے خطرہ

نئی دہلی(اے این این)بھارت کی شمالی ریاست اتر پردیش میں ریاستی سطح کی دو مخالف سیاسی جماعتوں نے اتحاد کا اعلان کر دیا ہے۔سماج وادی پارٹی اور بہوجن سماج پارٹی کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ اس سال ہونے والے عام انتخابات میں وہ وزیر اعظم نریندر مودی کو شکست دینے کے لیے اپنے اختلافات دور کر چکے ہیں۔ 220 ملین آبادی والی ریاست اتر پردیش میں نچلی ذات سمجھے جانے والے افراد اور غربا میں یہ جماعتیں کافی مقبول ہیں اور سیاسی (بقیہ 43نمبرصفحہ7پر )

اعتبار سے اس اہم ریاست میں بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیے چیلنج ثابت ہو سکتی ہیں۔ بھارت کی 552 رکنی وفاقی پارلیمان میں اتر پردیش کی 80 نشستیں ہیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر