ہارون آباد‘ تحصیل ہسپتال لاوارث ‘ عملہ کی لاپرواہی سے حاملہ خاتون جاں بحق

ہارون آباد‘ تحصیل ہسپتال لاوارث ‘ عملہ کی لاپرواہی سے حاملہ خاتون جاں بحق

ہارون آباد(نامہ نگار)تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال میں مبینہ طور پر عملہ کی لا پرواہی سے حاملہ خاتون جاں بحق ہو گئی ‘ِتحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال میں مبینہ طور پر ہسپتال کے عملہ کی لا پرواہی سے نواحی گاؤں 71فور آر کے مزدور محمد حسین کی بیوی رضیہ بی بی جاں بحق ہو گئی۔ لواحقین نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ہماری مریضہ حاملہ تھی طبیعت خراب ہونے پر ہسپتال کی ایمر جینسی میں لایا گیا تھا جہاں پر ڈیوٹی پر موجود (بقیہ نمبر41صفحہ12پر )

ڈاکٹر اور عملہ نے لا پرواہی کرتے ہوئے بروقت چیک نہیں کیا جس سے وہ جاں بحق ہو گئی لواحقین کا مزید کہنا تھا کہ عملہ نے ہمارے ساتھ بدتمیزی بھی کی اور ہسپتال میں لگے سی سی ٹی وی کیمرے چیک کرنے کا کہا تو پتہ چلا ہسپتال کے سی سی ٹی وی کیمرے ہی بند ہیں جس پر لواحقین نے احتجاج کرتے ہوئے متعلقہ ڈاکٹر اور عملہ کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا۔ ایم ایس تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال ڈاکٹر محمد سرور نے بتایا کہ مریضہ کو چیک کیا گیا اور مریضہ کا بلڈ پریشر بلکل نہیں تھا پھر بھی ہمارے عملہ نے مریضہ کے علاج کی اپنی بھر پور کوشش کی۔میں اس معاملہ کی تحقیقات بھی کرونگا اگر عملہ کی طرف سے کوئی لا پرواہی سامنے آئی تو اس کے خلاف کاروائی کی جائے گی۔وقوعہ کی اطلاع ملنے پر پولیس تھانہ سٹی موقع پر پہنچ گئی۔

خاتون

مزید : ملتان صفحہ آخر