سپریم کورٹ کے حکم پر بااثر قبضہ گروپ سے 25 ایکڑ اراضی واگزار ‘ متاثرہ شہری کو قتل کی دھمکیاں

سپریم کورٹ کے حکم پر بااثر قبضہ گروپ سے 25 ایکڑ اراضی واگزار ‘ متاثرہ شہری کو ...

حاصل پور(نامہ نگار)سپریم کورٹ کے حکم پر تقریبا ساٹھ سال سے پوراقبضہ بااثر قبضہ مافیا سے 25 ایکڑ اراضی واگزار کروا دی ۔تفصیل کے مطابق سپریم کورٹ آف پاکستان نے (بقیہ نمبر21صفحہ12پر )

انصاف کے تقاضے پورے کرتے ہوئے سماجی راہنما و زمیندار سید چنڑ فریدی کے حق میں سپریم کورٹ چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار فیصلہ کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر بہاولپور اور محکمہ پولیس کو ہدایت کی کہ ملک سعید چنڑ کو بذریعہ پولیس نفری کے ہمراہ بااثر قبضہ سے زمین واگزار کروائی جائے جس پر سپریم کورٹ کے حکم پر ڈپٹی کمشنر بہاولپور شوزب سعید نے متعلقہ ریونیو آفسران او ر ڈی پی او بہاولپور کو ہدایت جاری کیں کہ زمین واگزار کروائی جائے جس پر تھانہ ایس ایچ او راؤ شہزاد بابر اور تحصیلدار خیرپورٹامیوالی ، اسسٹنٹ کمشنر خیرپورٹامیوالی اور بہاولپور سے آئی ہوئی پولیس کے انچارج اور دیگر انتظامیہ اپنی زیر نگرانی زمین واگزار کروانے کے لیے موقع پر موجود رہے بعدازاں پولیس تھانہ عنائتی کے ایس ایچ او راؤ شہزاد بابر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ ڈی پی او بہاولپور کے حکم پر ہم نے زمین سے قبضہ واگزار کروا دیا ہے اگر کسی نے زمین میں مداخلت کرنے کی کوشش کی تو اس کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے اس موقع پر متاثر شخص ملک سعید چنڑ نے سپریم کورٹ آف پاکستان میاں ثاقب نثار اور ڈپٹی کمشنر بہاولپور ڈی پی او بہاولپور اسسٹنٹ کمشنر خیرپورٹامیوالی تحصیلدار اور مقامی ایس ایچ او اور مکمل انتظامیہ کا شکریہ اداکرتے ہوئے کہاکہ ساٹھ سال بعد مجھے 25ایکڑ کا رقبہ موضع رملی تحصیل خیرپورٹامیوالی کا قبضہ مل چکا ہے جس پر میں اللہ تعالیٰ کا شکر ادا کرتا ہوں اور انہوں نے اس موقع پر کہاکہ وینس برادری بااثر لوگ ہیں مجھے قتل کرنے کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں قانون کے مطابق میں وزیراعلیٰ پنجاب، ڈی پی او بہاولپوراور چیف جسٹس آف پاکستان سے مطالبہ کرتاہوں کہ مجھے جانی تحفظ دیا جائے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر