شانگلہ میں شدید برفباری، زندگی مفلوج، مکانات منہدم

  شانگلہ میں شدید برفباری، زندگی مفلوج، مکانات منہدم

  



الپوری (ڈسٹرکٹ رپورٹر)شا نگلہ میں شدید برف باری سے نظام زندگی کو مفلوج ہوکر رہ گئی،کہیں کچے مکانات گر گئیں۔ برف باری کے بعد وادی نے برف کی سفید چادر اوڑھ لی،خون جما دینے والی سردی نے لوگوں کو گھروں میں محصور کردیا،وادی شا نگلہ میں درجہ حرارت نقطہ انجماد سے گر گیا۔ ضلع بھر کے سڑکیں بند رہی، مین سڑک پر جگہ جگہ سلائیڈنگ اوربرف کی صفائی نہ ہونے سے ٹریفک کی روانی میں شدید مشکلات کا سامنا۔ رابطہ سڑکیں بند ہوگئی ہیں۔واپڈا بجلی کانظام درہم برہم۔ وادی تاریکی میں ڈوب گئی۔برف باری سے مقامی بجلی گھروں کی تاریں بھی ٹوٹ گئی۔ برف باری سے لطف اندوز ہونے کیلئے سیاحوں کی امد جاری،موبائل سگنل ڈراپ،ٹیلی فونک رابطہ منقطع- برف باری کے بعدوادی میں ٹھنڈ کا راج شروع،یخ بستہ ہوائیں چلنے سے سردی کی شدت میں اضافہ، شدید برف باری اور سوختی لکڑی کی قلت عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہیں - شانگلہ کے صدرمقام الپوری میں ہو کا عالم۔ سرکاری و نجی اداروں میں حاضری معمول سے کم رہی،بینک اف خیبر سمیت متعدد بینک کے کیش بند رہیں۔ پیرکو شدید برف باری کے بعدالپوری میں نظام زندگی مفلوج ہوکر رہ گئی۔مختلف ٹریفک حادثات میں کہیں افرادزخمی سڑکوں میں گاڑیوں کی پھسلن سے گاڑیاں پھنس گئی جبکہ متعدد گاڑیاں ایک دوسرے سے ٹکرا گئی۔ضلعی انتظامیہ شانگلہ خاموش تماشائی، این ایچ اے اور سی اینڈ ڈبلیو منظر عام سے غائب ہیں۔ شانگلہ کے میدانی علاقوں سین کڑئی میں موسلادھاربارش کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔ کاروباری زندگی ٹھپ ہوکر رہ گئی،شانگلہ ٹاپ،یخ تنگی ٹاپ،اور کنڈو سر میں ٹریفک میں مشکلات،بغیر چین گاڑی چلانے پر پابندی۔ شانگلہ گردونواح میں جمعہ اور اتوار کے درمیانی شب سے شروع ہونے والی برف باری نے معمولات زندگی کو بری طرح متاثر کر دیا ہے سخت سردی اور راستے بند ہونے سے لوگ گھروں میں محصور ہوکر رہ گئے۔ برف باری سے بجلی اور مواصلات کا نظام درہم برہم ہو گیا ہے۔ شانگلہ کے بالائی، پہاڑی سلسلوں شلخو سر، مان سر،چانگا سر،اجمیر سر، کاپر بانڈہ اور دیگر پہاڑی سلسلوں پر چار فٹ تک برف پڑ چکی ہے جبکہ شانگلہ ٹاپ،یختنگی ٹاپ، مانی سر پر دو فٹ برف پڑی ہوئی ہے،شانگلہ کے ضلعی ہیڈ کوارٹر الپوری،لیلونئی،اولندر میں اتک فٹ برف پڑ چکی ہے۔ بشام،دندی،پورن الوچ،چکیسرکماچ نصرت خیل،مارتونگ میں تیز اور سرد ہواؤں کے ساتھ بارش ہوئی ہے۔بارش اور برف باری سے سردی کی شدت میں زبردست اضافہ ہوا ہے جس کی وجہ سے جلانے کی لکڑی کی قیمتوں میں نمایا اضافہ ہوا ہے، سوختہ لکڑ کی قیمتوں میں اضافے اور قلت سے عوام کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جبکہ گیس کی قیمتوں میں بھی نمایا اضافہ ہو گیا ہے - لوگ گھروں کی چھتوں سے برف باری کی صفائی میں مصروف بیشتر صفائی کے دوران گر کر زخمی ہوگئیں۔ محکمہ موسمیات نے ائندہ ہفتے تک وقفے وقفے سے بالائی پہاڑی علاقوں میں بارش اور برف باری کی پیشنگوئی کی ہے۔۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...