بڑ خیلہ: پی ڈبلیوڈی لیبر یونین کا میرٹ کے بغیر بھرتیوں کیخلاف ہڑتال اور تحریک کا اعلان

بڑ خیلہ: پی ڈبلیوڈی لیبر یونین کا میرٹ کے بغیر بھرتیوں کیخلاف ہڑتال اور ...

  



بٹ خیلہ (بیورورپورٹ)پی ڈبلیو ڈی لیبر یونین خیبر پختونخواہ اور ایریگیشن ا یمپلائز فیڈریشن ڈویژن ملاکنڈ نے محکمہ ایریگیشن ملاکنڈ میں پوسٹوں پرمیرٹ کے بغیر بھرتیوں اورجونیئر اہلکاروں کی خفیہ طریقے سے ڈائریکٹ پروموشن کے خلاف بھوک ہڑتال اور احتجاجی تحریک شروع کرنے کا اعلان کردیا۔محکمہ ایریگیشن ملاکنڈ کے قبضہ مافیا ہیڈ کلرک آمیر عالم خان کو ایک ہفتے کے اندر اندر تبدیل نہیں کیا گیا تو ملاکنڈ ٹاپ پر ایکسیئن آفس کے سامنے بھوک ہڑتالی کیمپ لگائینگے اور صوبائی اسمبلی کے سامنے احتجاجی دھرنا دینگے۔محکمہ ایریگیشن ملاکنڈ میں بھرتی اور ریٹائرڈہونے والے ملازمین کی لسٹیں خفیہ رکھے جارہے ہیں جس کے نتیجے میں نہ صرف خفیہ طریقے سے ملازمین بھرتی کئے جارہے ہیں بلکہ حکومتی پالیسیوں کے برعکس سینئرز اہلکاروں کی جگہ جونیئر اہلکاروں کوڈائریکٹ پروموشن مل رہی ہے۔ سن کوٹہ سمیت سینکڑوں پوسٹوں پر بغیر میرٹ کے خفیہ طریقے سے بھرتیاں کرکے غریب ملازمین کے حقوق پر ڈاکہ ڈالا جارہا ہے۔احتجاج اور بھوک ہڑتال کا اعلان پی ڈبلیو ڈی لیبر یونین خیبر پختونخواہ کے صوبائی صدر گل زمین خان، ایریگیشن ایمپلائز فیڈریشن ملاکنڈ کے صدر شفیع اللہ خان، جنرل سیکرٹری محمد نبی، سینئر نائب صدر رحمان سید اور ممبرایگزیکٹیو کونسل اعجاز خان نے پریس کلب آفس میں ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ پی ڈبلیوڈی لیبر یونین خیبر پختونخواہ کے صوبائی صدر گل زمین خان اور ایریگیشن ایمپلائز فیڈریشن ڈویژن ملاکنڈ کے ضلعی صدر شفیع اللہ خان نے کہا کہ محکمہ ایریگیشن ملاکنڈ میں حکومتی پالیسیوں پر عمل در آمد نہیں ہورہا ہے اور سالہا سال سے ہیڈ کلرک پوسٹ پر قابض آمیر عالم خان نے سینئر اہلکاروں کی جگہ جونیئرز کو پروموشن دینے کا سلسلہ جاری رکھا ہے جس کی وجہ سے سالوں سے پروموشن کے منتظر غریب ملازمین مایوسی اور بے چینی میں مبتلا ہیں کیونکہ بغیر میرٹ کے بھرتیاں اور خفیہ طریقے سے جونیئر اہلکاروں کی پروموشن غریب ملازمین کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنے کے مترادف ہے۔صوبائی اور ضلعی عہدیداروں نے کہا کہ محکمے میں سنیارٹی لسٹ آوایزں کرنا لازمی ہے لیکن مذکورہ مافیا سنیارٹی لسٹ اور ریٹائرڈ ہونے ملازمین کی لسٹیں خفیہ رکھ کر من پسند آفرادکو بھرتی کر رہے ہیں ۔ صوبائی صدر گل زمین خان، ضلعی صدر شفیع اللہ خان اور رحمان سید نے الزام لگایا کہ محکموں میں 25 فیصد سن کوٹہ مختص ہوتا ہے لیکن ایریگیشن ڈیپارٹمنٹ میں سن کوٹہ سمیت سینکڑوں پوسٹیں بھاری رقوم کے عوض فروخت ہو چکے ہیں جن کے نام بھی خفیہ رکھے جارہے ہیں۔ عہدیداروں نے مطالبہ کیا کہ محکمہ ایریگیشن ملاکنڈ کے ہیڈ کلرک آمیر عالم خان کو فی الفور یہاں سے ٹرانسفر کرکے غریب ملازمین پر رحم کیا جائے اور اگر ایک ہفتہ کے اندر اندر مذکورہ ہیڈ کلرک کا تبادلہ نہیں کیا گیا تو محکمہ ایریگیشن ملاکنڈ کے ایکسئین کے دفتر کے سامنے بھوک ہڑتالی کیمپ لگائینگے اور ساتھ ہی صوبائی اسمبلی کے سامنے احتجاجی دھرنا دینگے جس میں کسی بھی ناخوشگوار واقعے کی ذمہ داری مذکورہ ہیڈکلرک اور متعلقہ قبضہ مافیا پر ہو گی۔ اس دوران انہوں نے محکمہ انٹی کرپشن، نیب، صوبائی وزیر ایریگیشن اور ڈپٹی کمشنر ملاکنڈ سمیت دیگر متعلقہ اداروں سے اسی قبضہ مافیا کے آثاثوں کی تحقیقات کرانے، غیر قانونی اور خلاف میرٹ بھرتیوں کا روک تھام کرنے اور غریب ملازمین کے حقوق کے تحفظ کا مطالبہ کیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر