نشتر: اہم ترین عہدوں پر چہیتے پروفیسرز کی عارضی تعیناتی درد سر

نشتر: اہم ترین عہدوں پر چہیتے پروفیسرز کی عارضی تعیناتی درد سر

  



ملتان ( وقا ئع نگار) نشتر میڈیکل یونیورسٹی کے اہم ترین عہدوں پر چہتے پروفیسروں کی عارضی تعیناتی درد سر بن گئی۔ڈاکٹروں سمیت دیگر ملازمین کے ساتھ نازیبا الفاظ استعمال کرنا اپنا وطیرہ بنالیا۔جسکی وجہ سے ڈاکٹرز و ملازمین شدید ذہنی اذیت سے دوچار ہونے لگے ہیں۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے نشتر میڈیکل یونیورسٹی میں ایک اہم عہدے پر تعینات افسر نے یونیورسٹی کے مختلف عہدوں پر اپنے قریبی پروفیسروں کو عارضی طور پر تعینات کروایا ہے۔جن کا رویہ اپنے ڈاکٹروں اور ملازمین کے ساتھ تاحال ہتک(بقیہ نمبر56صفحہ12پر)

آمیز چلا آرہا ہے۔ائے روز کسی نہ کسی ڈاکٹرز یا ملازمین کو بلاوجہ تنقید کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔اور انکے ساتھ نازیبا الفاظ استعمال کیئے جاتے ہیں۔حالیہ چند دنوں میں مذکورہ یونیورسٹی کے عہدوں پر عارضی تعینات پروفیسروں نے نشتر ہسپتال کے ایم ایس سینت دیگر اے ایم ایس حضرات کے ساتھ بھی بدتہمیزی کی ہے۔جسکی وجہ سے ڈاکٹرز شدید ذہنی دباؤ میں مبتلا ہیں۔انہوں نے وزیر صحت یاسمین راشد سے مذکورہ صورت حال پر فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔جبکہ نشتر حکام کے مطابق پروفیسروں کے رویوں میں بہت بہتری ہے۔قصور وار کو سمجھایا جاتا ہے

درسر

مزید : ملتان صفحہ آخر