نو شین آغا کے تمام الزام جھوٹے اور بے بنیاد ہیں،آغا علی

نو شین آغا کے تمام الزام جھوٹے اور بے بنیاد ہیں،آغا علی

  



لاہور(فلم رپورٹر)اداکار آغا علی نے پروڈیوسر نوشین آغا کی طرف سے دھوکہ دہی اور فراڈ کے الزامات کا بھرپور انداز میں جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ تمام الزام جھوٹے اور بے بنیاد ہیں جن میں کسی قسم کی کوئی سچائی نہیں ہے۔آغا علی نے کہا کہ نوشین آغا کے تمام الزامات جھوٹے اور بچگانہ ہیں جن پر کوئی بھی یقین نہیں کرسکتا کیونکہ اس نے مجھ پر جو الزام عائد کئے ہیں ان میں نہ تو سچائی ہے اور نہ کوئی ثبوت۔نوشین آغا خود فراڈ عورت ہے جس کا سب فنکاروں نے بہت ساتھ دیا۔ نوشین نے مجھ سے اس سیریل ”دل سرکش“ کے لئے رابطہ کیا تو اس نے کہا کہ آپ اسلام آباد آجائیں میں آپ کو ایڈوانس رقم کا چیک دے دوں گی۔میرے ساتھ حنا الطاف اور دوسرے فنکاروں نے بھی ریکارڈنگ شروع کردی۔ سب کچھ ٹھیک ہورہا تھا لیکن ہمیں ادائیگی نہیں ہورہی تھی کیونکہ نوشین ہر روز اپنا کوئی نہ کوئی مسئلہ بیان کرتی تھی۔نو دن کی ریکارڈنگ کے بعد اس نے کہا کہ مجھے جہاں سے پیسے ملنے تھے وہ نہیں ملے لہٰذا آپ لوگ واپس چلے جائیں۔ریکارڈنگ کے دوران ہم میں سے کسی نے بھی اسے پیسوں کے لئے تنگ نہیں کیا۔ ہم نے کوئی ایسا کام نہیں کیا تھا جس کی وجہ سے ہم وہاں سے چوری چھپے فرار ہوجاتے اور جہاں تک بات ڈیٹا چوری کرنے کی ہے ہمیشہ ڈیٹا پروڈیوسر یا ٹیم کے پاس ہوتا ہے نہ کہ فنکاروں کے پاس۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ نوشین کی طرف سے مجھ پر لگائے گئے کسی بھی الزام کا کوئی ثبوت اس کے پاس نہیں ہے۔میرے اکاؤنٹ میں اس کی طرف سے ایک بھی پیسہ نہیں گیا۔میں 8 لاکھ کیش کی صورت میں کیوں لوں گا اور اگر لئے بھی ہیں تو اس کا کوئی ثبوت یا تحریر تو ہوگی۔

نوشین آغا کے تمام میسج اور کال ریکارڈ میرے پاس ہے جو ثبوت کے طور پر دے سکتے ہیں۔آغا علی نے بتایا کہ میں نے تو پہلے ہی نوشین آغا پر ایک کروڑ روپے ہرجانے کا کیس کیا ہوا اور اسے نوٹس بھی بھیجا ہے۔

مزید : کلچر