سندھ حکومت سے مذاکرات کامیاب، گڈز ٹرانسپورٹرز کاہڑتال ختم کرنے کا اعلان 

  سندھ حکومت سے مذاکرات کامیاب، گڈز ٹرانسپورٹرز کاہڑتال ختم کرنے کا اعلان 

  



کراچی (این این آئی)سندھ حکومت اور گڈز ٹرانسپورٹرز کے درمیان مذاکرات کامیاب،گڈز ٹرانسپورٹرز نے ہڑتال ختم کرنے کا اعلان کردیا۔سندھ کے وزیر ٹرانسپورٹ اویس شاہ نے ماڑی پور ٹرک اسٹینڈ پر ٹرانسپورٹرز کیساتھ پریس کانفرنس ہوئے کہا ہے کہ ٹرانسپورٹرز کے مطالبے پر ڈرائیونگ لائسنس کا اختیار ٹریفک پولیس سے واپس لیا جائے گا اور سندھ اسمبلی سے قانون سازی کرکے محکمہ ٹرانسپورٹ کو منتقل کیا جائے گا،روٹ پرمٹ کی فیس سے متعلق کمیٹی بنادی گئی ہے۔کم سے کم جو فیس طے ہوگی اسے منظورکیا جائے گا, صوبائی حکومت ٹرانسپورٹرز کے مطالبات تسلیم کرتی ہے،محکمہ ٹرانسپورٹ کی طرف سے فٹنس،روٹ پرمٹ اور دیگر مسائل حل کیے جائیں گے۔ملک کے موجودہ معاشی حالات ہڑتالوں اور نقصانات کی اجازت نہیں دیتے, ڈرائیورنگ لائسنس کا اختیار ٹریفک پولیس کے پاس نہیں بلکے محکمہ ٹرانسپورٹ کے پاس ہونا چاہیے۔انہوں نے مزید کہا کہ گڈز ٹرانسپورٹرز کے 90 فیصد مسائل وفاق سے ہیں, گڈز ٹرانسپورٹرز کاسب سے بڑا مسئلہ مراد سعید کے استعفیٰ کا ہے۔وفاق میں بیٹھے بیوقوف لوگوں کو مسائل حل کرنے کا تجربہ ہی نہیں۔سندھ حکومت وفاق کی طرح معاملات کو الجھانے پر یقین نہیں رکھتی, وزیراعلی اور پارٹی قیادت نے ٹرانسپورٹرز کے مسائل حل کرنے کا حکم دیا ہے،کچھ مطالبات فوری حل کیے ہیں, باقی پر بھی جلد عمل درآمد کروایا جائے گا, کاش وفاقی حکومت کو بھی آپ کے مسائل کا احساس ہوتا,ٹرانسپورٹرز کی ہڑتال کی وجہ سے اربوں کا نقصان ہوا ہے،ٹرانسپورٹرز کے وفاقی حکومت نے ابھی تک مطالبات نہیں مانے سندھ حکومت نے مان لیے ہیں,وفاق میں ہماری حکومت ہوتی تو 8 دن کی بجائے 8 گھنٹے میں مطالبات مان لیتے،مگر وفاق میں بیٹھے نالائق وزرا کو مسائل حل کرنے کا تجربہ ہی نہیں ہے.ٹرانسپورٹ اتحاد کے صدر محمد اسلم نے کہا کہ ہمارے مطالبات مان لیے گئے ہیں کئی سالوں سے ہمارے کام نہیں ہورہے تھے،آج وہ منظورہوگئے۔

گڈز ٹرانسپورٹرز کی ہڑتال 

مزید : صفحہ آخر