بجلی پر 25ارب خسارے کا ابتک سامنا، وسیع پیمانے پر پیٹرول سمگلنگ جاری 

  بجلی پر 25ارب خسارے کا ابتک سامنا، وسیع پیمانے پر پیٹرول سمگلنگ جاری 

  



اسلام آباد(آئی این پی)پیر کے روز سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی زیر صدارت قومی اسمبلی کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں فیڈرل گورنمنٹ ایمپلائز ہاؤسنگ اتھارٹی اور بینکوں کے قومیانے ترمیمی بل متفقہ طور پر منظور کر لئے گئے جب کہ اپوزیشن کے اتفاق رائے کے بعد حکومت نے تحفظ مخبر و نگران بل 2019 واپس لے لیا، بل مزید غور وخوض کے لئے متعلقہ قائمہ کمیٹی کو بھجوا دیا ہے گیا۔ وفاقی وزیر مذہبی امور نور الحق قادری نے اقلیتوں کی اشتمالی املاک کے تحفظ کا آرڈیننس 2001 میں مزید ترمیم کرنے کا بل (اقلیتوں کی اشتمالی املاک کے تحفظ کا ترمیمی بل 2020 پیش کیا۔ سپیکر نے بل متعلقہ قائمہ کمیٹی کو بھجوا دیا۔ وزیر ہاؤسنگ طارق بشیر چیمہ نے فیڈرل گورنمنٹ ایمپلائز ہاؤسنگ اتھارٹی کے قیام کے لئے احکام وضع کرنے کا بل (فیڈرل گورنمنٹ ایمپلائز ہاؤسنگ اتھارٹی بل 2020 پیش کیا ۔ سپیکر نے بل کی شق وار منظوری کے بعد رائے شماری کے ذریعے بل متفقہ طور پر منظور کر لیا۔

بل منظور

 اسلام آباد(آئی این پی)قومی اسمبلی اجلاس میں بتایا گیا ہے کہ حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 28روپے سے زائد فی لیٹر اضافہ کیا،وزیر اعظم عمران خان نے22 غیر ملکی دورے کئے جن پر119.57 ملین اخراجات آئے،وزیر اعظم کے ہمراہ 440 افراد نے بھی دورہ کیا،وزیر اعظم نے صرف ایک بار کمرشل پرواز کا استعمال کیا،قومی اسمبلی میں وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب خان،پارلیمانی سیکرٹریز عندلیب عباس اور خیال زمان نے وقفہ سوالات میں ارکان کے سوالوں کے جواب دئے۔ وزیر توانائی عمر ایوب خان نے بتایا کہ لیسکو میں 55 ارب کا خسارہ تھا،جسکو گزشتہ مالی سال میں ختم کر دیا گیا۔ لیسکو نے7.8 ملین منافع کمایا، جب ہماری حکومت آئی تو اس وقت ماہانہ گردشی قرضہ 39 ارب روپے بڑھ رہا تھا،جس کو کم کر کے 12 ارب تک ماہانہ لے آئے ہیں،ملک بھر میں 80 فیصد فیڈرز پر لوڈشیڈنگ ختم کر دی،گزشتہ حکومت نے دیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا فائدہ عوام کو منتقل نہیں کیا تھا۔ ہمارا فوکس سسٹم اور ٹرانسمیشن لائنوں کی اپ گریڈیشن پر ہے جسکی وجہ سے شدید بارشوں اور دھند کے باوجود بجلی کی فراہمی میں تعطل نہیں آیا۔ اس وقت بھی 90 سے 100 ارب تک سبسڈی دے رہے ہیں۔ پارلیمانی سیکرٹری پیٹرولیم خیال زمان نے بتایا کہ ضلع چترال میں اسٹینائٹ،کرومائیٹ،تانبا،خام لوہا اور خام زنک کے ذخائر موجود ہیں۔ ملک میں بڑی مقدار میں سمگل پیٹرولیم مصنوعات فروخت ہو رہی ہیں۔ وزارت خارجہ نے اپنے تحریری جواب میں ایوان کو آگاہ کیا کہ وزیر اعظم عمران خان کے ستمبر 2018 سے ابتک  22 غیر ملکی دورے کئے، 57.119 ملین روپے اخراجات آئے۔ 22 دوروں پر ان کے ہمراہ 440 افراد نے بھی دورہ کیا،دوروں کیلئے حکومتی طیارہ استعمال کیا جبکہ صرف ایک بار کمرشل پرواز کا استعمال کیا۔پیٹرولیم ڈویڑن نے اپنے تحریری جواب میں ایوان کو آگاہ کیا کہ مئی 2018 کے بعد موجود حکومت نے پیٹرول کی قیمتوں میں میں فی لیٹر84.28،ڈیزل 28.5 روپے،مٹی کے تیل کی قیمت میں 19.58 روپے اور لائٹ ڈیزل کی قیمت میں فی لیٹر 66۔15 روپے اضافہ کر چکی ہے۔

قومی اسمبلی اجلاس

مزید : صفحہ آخر