ناموس رسالت ؐ کا تحفظ قربت خداوندی کا ذریعہ ہے،علماء

ناموس رسالت ؐ کا تحفظ قربت خداوندی کا ذریعہ ہے،علماء

  



لاہور(نمائند ہ خصوصی)عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے یونٹ راوی روڈ لاہور کے زیراہتمام تحفظ ختم نبوت اجتماع جامعۃ الازہربادامی باغ میں مجلس لاہور کے نائب امیر پیرمیاں محمدرضوان نفیس کی صدارت میں منعقد ہوا۔عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی ناظم تبلیغ مولانا محمداسماعیل شجاع آبادی، مبلغ ختم نبوت لاہور مولانا عبدالنعیم، جامعۃ الازہر کے مہتمم مولانا مفتی ظہیراحمد شاہ، مولانا محمدقاسم،مجلس راوی روڈ کے رہنماؤں مولانا محمدفرمان، حامد بلوچ، عمران نادر بھٹیودیگر علماء نے شرکت کی۔ مولانامحمداسماعیل شجاع آبادی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ناموس رسالت کا تحفظ کرنا قربت خداوندی اور نجات اخروی حاصل کرنے کے مترادف ہے،جب تک اس دھرتی پر ایک بھی قادیانی موجود ہے ہماری تحریک جاری رہے گی انہوں نے کہا کہ پنجاب اسمبلی اور قومی اسمبلی نے گستاخانہ مواد کی روک تھام کے لیے قرارداد پیش کر کے پوری امت مسلمہ کی طرف سے فرض کفایہ اداکیا ہے۔

 تمام اراکین مبارک با دکے مستحق ہیں۔ قادیانیوں کو غیر مسلم اقلیت قراردینے کا فیصلہ صرف علماء کرام اور مفتیان عظام نہیں تھا بلکہ پاکستان کی دستور ساز اسمبلی سیشن کورٹس، ہائیکورٹس، سپریم کورٹ اور وفاقی شرعی عدالت سے لے کر کینیا، رابطہ عالم اسلامی، انڈونیشیا اور جنوبی افریقہ اور گمبیاکی عدالتوں نے بھی قادیانیوں کے کفر و ارتداد پر مہر تصدیق ثبت کر دی ہے۔مولانا عبدالنعیم نے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت اسلام میں خشت اول کی حیثیت رکھتا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1