محکمہ انسا نی حقوق میں گھوسٹ ملا زمین کو بر داشت نہیں کیا جا ئے گا،ویر جی کو ہلی

محکمہ انسا نی حقوق میں گھوسٹ ملا زمین کو بر داشت نہیں کیا جا ئے گا،ویر جی کو ...

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر) وزیر اعلیٰ سندھ کے معاون خصوصی برائے انسانی حقوق ویرجی کوہلی کی زیر صدارت محکمہ انسانی حقوق سندھ کے ملازمین کا جنرل ورکرز اجلاس کراچی میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں سیکریٹری محکمہ انسانی حقوق سندھ بدر جمیل میندھرو نے بھی شرکت کی۔ سندھ کے تمام اضلاع سے محکمہ کے افسران اور ملازمین نے اجلاس میں شرکت کی اور اپنی اپنی کارکردگی سے اجلاس کو آگاہ کیا۔ اجلاس میں محکمہ کی کارکردگی کو مزید بہتر بنانے کے لیے اقدامات تیز کرنے پر زور دیتے ہو ئے معاون خصوصی برائے انسانی حقوق ویرجی کوہلی نے کہا کہ اس اجلاس کا اصل مقصد گھوسٹ ملازمین کی نشاندہی کرنا اور انکے خلاف کاروائی کرنا ہے۔ محکمہ انسانی حقوق سندھ میں کسی گھوسٹ ملازم کو برداشت نہیں کیا جائیگا۔ ویرجی کوہلی نے ملازمین سے انکے مسائل بھی دریافت کیے اور انکو جلد حل کرنے کی یقین دہانی کرواتے ہوے بتایا کہ کنٹریکٹ ملازمین کی تنخواہوں کے مسائل مستقل بنیادوں پر حل کرنے کیلئے اقدامات کر رہے ہیں اور جلد ہی ملازمین کو خوشخبری ملے گی۔ کنٹریکٹ ملازمین کا نوکریوں کو مستقل کرنے کے اصرار پر ویرجی کوہلی نے کہا کہ صرف کام کرنے والے اور بہتر کارکردگی دکھانے والے ملازمین کو مستقل کیا جائے گا۔ سیکریٹری محکمہ انسانی حقوق سندھ بدر جمیل نے کہا کہ سندھ کے تمام اضلاع میں محکمہ انسانی حقوق کے دفاتر قائم کیے جاینگے اور ہیڈکوارٹر سے انکی کارکردگی کو مانیٹر کیا جائیگا۔ تمام ملازمین کو ایک ہفتے کے اندر اندر آفس کارڈ کا اجراء کر دیا جائے گا تا کہ فیلڈ میں جا کر کام کرنے میں جو تکلیف انہیں درپیش ہیں انہیں دور کیا جاسکے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر