شادی کے موقع پر آتش فشاں پھٹ گیا لیکن دولہا دلہن ٹَس سے مَس نہ ہوئے، نیا ریکارڈ بنا ڈالا

شادی کے موقع پر آتش فشاں پھٹ گیا لیکن دولہا دلہن ٹَس سے مَس نہ ہوئے، نیا ...
شادی کے موقع پر آتش فشاں پھٹ گیا لیکن دولہا دلہن ٹَس سے مَس نہ ہوئے، نیا ریکارڈ بنا ڈالا

  



منیلا(مانیٹرنگ ڈیسک) فلپائن میں ایک جوڑے نے ایک آتش فشاں کے دامن میں اپنی شادی کی تقریب رکھی۔ جب ان کی شادی کی تاریخ آئی تو حکام کی طرف سے اسی تاریخ کی وارننگ جاری کر دی گئی کہ اس دن آتش فشاں پھٹ پڑے گا۔ دی مرر کے مطابق اس خوفناک وارننگ کے باوجود اس جوڑے نے اسی تاریخ کو اسی مقام پر اپنی شادی منعقد کر ڈالی۔ ان کی سوشل میڈیا پر پوسٹ کی گئی تصاویر میں دیکھا جا سکتا ہے کہ دولہا دلہن اور ان کے مہمان شادی کی تقریب میں ہوتے ہیں اور ان سے کچھ فاصلے پر آتش فشاں سے دھوئیں اور راکھ کے بادل اٹھ رہے ہوتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق اس دولہا کا نام شینو والفر اور دلہن کا نام کیٹ تھا جنہوں نے سیوانا فارم (Savannah Farm) میں اپنی شادی کی، جہاں سے کچھ فاصلے پر ہی ’ٹال ‘ (Taal) نامی آتش فشاں پہاڑ موجود ہے۔ شینو اور کیٹ کا کہنا تھا کہ ”ہم آٹھ سال سے اپنی شادی کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔ جب ہم نے اس جگہ کو تقریب کے لیے منتخب کیا اس وقت آتش فشاں پھٹنے کی کوئی اطلاع نہیں تھی۔ جب ہم نے سب انتظام کر لیے تو وارننگ آ گئی مگر ہم نہیں چاہتے تھے کہ اب ہماری شادی منسوخ ہو، چنانچہ ہم نے اسی تاریخ کو شادی کر لی۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...