مولانا ثناء اللہ چنیوٹی کی زندگی عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ میں گزری، علماء کرام

    مولانا ثناء اللہ چنیوٹی کی زندگی عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ میں گزری، علماء ...

  

لاہور  (سٹی رپورٹر)ملک کے ممتاز عالم دین ادارہ مرکزیہ دعوۃ والارشاد چنیوٹ کے ناظم نشر و اشاعت مولانا ثناء اللہ چنیوٹی کی وفات پر جامعہ اشرفیہ لاہور کے مہتمم مولانا حافظ فضل الرحیم اشرفی، نائب مہتمم و ناظم اعلیٰ مولانا قاری ارشد عبید، حافظ اسعد عبید، حافظ اجود عبید، مولانا محمد اکرم کاشمیری، پروفیسر مولانا محمد یوسف خان، مولانا فہیم الحسن تھانوی، مولانا مجیب الرحمن انقلابی، انٹر نیشنل ختم نبوت مؤومنٹ کے مرکزی امیر مولانا ڈاکٹر سعید احمد عنائیت اللہ،مرکزی سیکرٹری جنرل مولانا ڈاکٹر احمد علی سراج،نائب امیرمولانا حافظ ملک عبدالصمد، مولانا عبدالرؤف مکی، مولانا محمد الیاس چنیوٹی ایم پی اے، مولانا صاحبزادہ زاہد محمود قاسمی،معاون خصوصی امیر مرکزیہ مولانا محمد بن سعید، مولانا قاری محمد طیب عباسی، مولانا امداد اللہ قاسمی، مولانا قاری شبیر احمد عثمانی، مولانا قاری محمد رفیق وجھوی، مولانا غلام یاسین صدیقی،عالمی اتحاد اہل سنت کے سربراہ مولانا محمد الیاس گھمن، مرکزی جمعیت علماء اسلام پاکستان کے سرپرست اعلیٰ مولانا میاں محمد اجمل قادری اور صاحبزادہ مولانا احمد علی ثانی نے اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم مولانا ثناء اللہ چنیوٹی کی تمام زندگی عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ، تحقیق و تصنیف اشاعت اسلام، فتنہ قادیانیت کے علمی تعاقب اور نسل نو کے ایمان کی حفاظت میں گذری ان کی وفات سے ملک ایک جید عالم دین اور مجاہد ختم نبوت سے محروم ہوگیا انہوں نے کہا کہ وہ مولانا محمد الیاس چنیوٹی اور ان کے دیگر عزیز و اقارب کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -