راجگڑ ھ میں سنگدل باپ نے 2معذوربیٹیوں کو قتل کرکے خودکشی کرلی 

راجگڑ ھ میں سنگدل باپ نے 2معذوربیٹیوں کو قتل کرکے خودکشی کرلی 

  

لاہور(کرائم رپورٹر)راجگڑھ میں باپ نے دو معذور بیٹیوں کو قتل کرکے خودکشی کرلی جبکہ فیکٹری ایریا میں ملزم نے  23 سالہ لڑکی قتل اور اسکی بہن زخمی کردیا اور شاہدرہ میں مخالفین نے فائرنگ کرکے ایک شخص کو قتل اور دوسرے کو زخمی کردیا تفصیلات کے مطابق  ساندہ کے علاقے راجگڑھ ٹوکے والا چوک میں سنگدل باپ نے اپنی دو معذور بیٹیوں کو قتل کرنے کے بعد خودکشی کرلی پولیس کے مطابق قتل ہونے والوں میں 34 سالہ سعدیہ اور 30 سالہ اقصیٰ شامل ہیں، ملزم ضیاء بٹ نے معذور بیٹیوں کو چھریوں کے پے در پے وار کر کے قتل کیاجس کے بعد ملزم نے خود کو بھی چھریوں کے وار سے زخمی کیا، ضیاء بٹ کو طبی امداد کے لیے میو ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ جانبر نہ ہوسکا پولیس کے مطابق ملزم ضیاء بٹ کی اہلیہ بھی گھر پر موجود تھی جسے شامل تفتیش کرلیا گیا تینوں نعشوں کو پوسٹ مارٹم کے لیے مردہ خانے منتقل کر دیا گیا دوسری واردات میں فیکٹری ایریا کے علاقے غازی روڈ پر عبداللہ نامی ملزم نے شادی سے انکار پر طیش میں آکر گھر میں گھس کر اندھا دھند فائرنگ کر دی جس کے نتیجے میں 23سالہ کائنات موقع پر جاں بحق جبکہ اس کی بہن ایمن شدید زخمی ہو گئی اطلاع ملنے پر پولیس نے فوری کاروائی کرتے ہوئے بہار کالونی سے ملزم عبداللہ کو گرفتار کر کے اسلحہ برآمد کر کے کائنات کی لاش کو پوسٹمارٹم کے لیے جبکہ زخمی ایمن کو فوری طبی امداد کے لیے ہسپتال منتقل کر کے قانونی کاروائی کا آغاز کر دیا پولیس کے مطابق   مقتولہ کائنات کی ملزم کے ساتھ ٹیلی فونک دوستی تھی ملزم اس سے شادی کرنا چاہتا تھا مگر مقتولہ نے انکار کر دیا جس پر ملزم نے انتہائی قدم اٹھاتے ہوئے فائرنگ کی تیسری واردات میں شاہدرہ کے علاقے فیروز والا کچہری شاہدرہ موڑ کے قریب نامعلوم موٹرسائیکل سوار ملزمان نے پیشی پر آئے دو افراد پر ادھا دھند فائرنگ کر دی جس کے نتیجے میں پیشی کے لیے آنے والے شوکت کو پانچ گولیاں لگیں اور وہ موقع پر جابحق ہوگیاجبکہ فاروق شدید زخمی ہو گیا جسے فوری طبی امداد کے لئے اسپتال بھجوادیا گیااطلاع ملنے پر پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی شواہد اکٹھے کرکے لاش پوسٹمارٹم کیلئے مردہ خانے منتقل کردی ذرائع کے مطابق قتل ہونے والا شوکت مقدمہ قتل میں ضمانت پر تھا اور کچہری فیروزوالہ میں تاریخ پر آیا تھا پولیس مصروف تفتیش ہے۔

قتل وارداتیں 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -