مائیک پنس کاصدر کو ہٹانے سے انکار، امریکی ایوان نمائند گان میں صدر ٹرمپ کے مواخذے کی قرار داد منظور، اب معاملہ سینیٹ میں جائے گا 

  مائیک پنس کاصدر کو ہٹانے سے انکار، امریکی ایوان نمائند گان میں صدر ٹرمپ کے ...

  

  واشنگٹن(اظہر زمان،مانیٹرنگ ڈیسک)امریکی ایوان نمائندگان نے صدر ٹرمپ کے مواخذے کی قرار داد کثرت رائے سے منظور کر لی، قرار داد کے حق میں 232 اور مخالفت میں 197ارکان نے ووٹ دیا جبکہ 10ری پبلکن ارکان نے بھی قرار داد کے حق میں ووٹ دیا۔ اب یہ قرارداد امریکی سینیٹ میں جائیگی، اگر سینیٹ میں بھی یہ قرار داد منظور ہو گئی تو امریکی صدر ٹرمپ کو عہدے سے الگ ہونا پڑے گا، ڈونلڈ ٹرمپ واحد امریکی صدر ہیں جنہیں دوبار مواخذے کا سامنا کرنا پڑا، اس سے قبل گزشتہ روز امریکی ایوان نمائند گا ن (کانگریس)نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو ملک کے آئین کی 25 ویں ترمیم کے تحت ہٹانے کیلئے قرارداد منظور کرلی۔بین الاقوامی میڈیا کے مطابق امریکی ایوان نمائند گا ن (کا نگر یس)میں منظور کی گئی قرارداد میں نائب صدر کو کہا گیا وہ آئین کی 25 ویں ترمیم کے تحت ڈونلڈ ٹرمپ کو ان کے عہدے سے برطرف کر دیں۔دوسری جانب نائب صدر مائیک پنس نے ٹرمپ کو ہٹانے کی حمایت سے انکار کردیا۔ کانگریس میں اس حوالے سے پیش کی گئی قرارداد کی منظوری سے چند گھنٹوں قبل سپیکر نینسی پلوسی کو لکھے گئے خط میں مائیک پنس نے کہا ٹرمپ کی صدارتی مدت کے اختتام میں صرف 8 دن باقی ہیں، ایسے وقت میں اس طرح کی کارروائی کسی طرح ہمارے قومی مفاد اور آئین سے ہم آہنگ نہیں کیونکہ جس آئینی ترمیم کے تحت کارروائی کی بات کی جارہی ہے وہ سزا دینے کیلئے استعمال نہیں کی جا سکتی۔واضح رہے گزشتہ ہفتے ڈونلڈ ٹرمپ کے حامیوں نے اس وقت امریکی پارلیمنٹ کیپٹل ہل پر دھاوا بولا تھا جب جو بائیڈن کو ملنے والے الیکٹورل ووٹس کی توثیق کی جارہی تھی۔ واقعے کے بعد ڈونلڈ ٹرمپ کے مخالفین نے انہیں عہدے سے ہٹانے کیلئے موا خذ ے کی کارروائی شروع کرنے سے پہلے کابینہ سے برطرف کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔

ٹرمپ مواخذہ

مزید :

صفحہ اول -