پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ نے این آر او سے ہمیشہ فائدہ حاصل کیا: شہزاد اکبر،مشیروں کا منہ کالا ہو گیا: مریم اور نگزیب

        پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ نے این آر او سے ہمیشہ فائدہ حاصل کیا: شہزاد ...

  

 لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) مشیر داخلہ و احتساب شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ براڈ شیٹ سے کرپٹ اشرافیہ اور ان کی منی لانڈرنگ بے نقاب ہوئی، انہوں نے اپنے دفاع کیلئے غلط بیانی سے کام لیا۔لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شہزاد اکبر نے کہا کہ جب بھی این آر او یا ڈیل ہوئی، پیپلز پارٹی اور ن لیگ کو فائدہ پہنچا۔ شریف خاندان نے پہلی ڈیل مشرف کے ساتھ کی اور بیرون ملک چلے گئے۔ پیپلز پارٹی اور ن لیگ میں کوئی فرق نہیں، دونوں نے ملک کو لوٹا۔ پیپلز پارٹی کی نظریاتی اساس ختم ہو چکی، اب نظریہ صرف لوٹ مار کا ہے۔ فیٹف کے معاملے پر اپوزیشن نے کبھی عوام کیلئے ریلیف نہیں مانگا۔ مذاکرات کا حصہ رہا ہوں، اپوزیشن نے صرف نیب قوانین ختم کرنے کی بات کی۔ یہ لوگ صرف ذاتی تحفظ چاہتے ہیں۔ وہ بحث الگ ہے کہ براڈشیٹ نے نیب کو معاونت کی یا نہیں۔دوسری جانب ن لیگ کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ براڈشیٹ کا ٹویٹ وزیراعظم کیخلاف چارج شیٹ ہے، کمپنی نے حکومتی مشیروں کا منہ کالا کر دیا، ملکی تاریخ میں سب سے زیادہ منی لانڈرنگ آج ہو رہی ہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم اورنگزیب نے کہا کہ منتخب وزیراعظم کیخلاف مقدمہ بنانے کیلئے 600 کروڑ دیئے، مشرف نے 600 کروڑ روپے اپنی جیب سے نہیں دیئے۔ براڈشیٹ کمپنی سے کہا گیا نواز شریف کیخلاف کیس بنائے جائیں، مشرف کی کابینہ کا حصہ بننے والوں کو لسٹ سے نکالنے کا حکم دیا گیا، مشرف دور میں کچھ نیب زادے اور کچھ نیب زدہ بنے،کمپنی کو مقدمہ بنانے کیلئے سیاسی حریفوں کی لسٹ دی گئی۔انہوں نے کہاکہ نیب اور سرکاری کاغذوں میں اربوں روپے کی ریکوری ہوگئی، ریکوری نہیں ہوئی، جعلسازی کی گئی تھی۔ عمران خان کی چوری پکڑی جا رہی ہے تو براڈشیٹ یاد آگئی۔ براڈ شیٹ نے آمر اور آپ کیخلاف چارج شیٹ دی۔ براڈشیٹ نے پاکستان کے فرسودہ نظام کو بے نقاب کیا، ملک کا نظام موجودہ حکومت سے نہیں چل سکتا، فرسودہ نظام جمہوری حکومتوں کیخلاف استعمال ہوتا رہا۔

شہزاد اکبر

مزید :

صفحہ اول -