سمگل شدہ پٹرولیم مصنوعات کیخلاف کریک ڈاؤن‘ چھاپے‘ جرمانے شروع 

  سمگل شدہ پٹرولیم مصنوعات کیخلاف کریک ڈاؤن‘ چھاپے‘ جرمانے شروع 

  

محمدپور دیوان (نامہ نگار) سمگل شدہ پیٹرولیم مصنوعات کی روک تھام کیلئے حکومت نے پیٹرول پمپس مالکان کیخلاف سخت کارروائی کی تیاری کرلی ہے،ایف بی آر کو کریک ڈان کا حکم جاری کردیا‘ یٹرولیم مصنوعات کی اسمگلنگ کے حوالے سے وزیر اعظم کی ہدایت پر کریک (بقیہ نمبر38صفحہ 6پر)

ڈان کیلئے نوٹیفکیشن جاری ہونے کے بعد ایف بی آر کے تحت اسمگل شدہ پٹرولیم مصنوعات کے خلاف کریک ڈان کا آغاز کردیا گیا۔ سالانہ2ارب ڈالرز کی اسمگل شدہ پٹرولیم مصنوعات فروخت کی جاتی ہیں، اسمگلنگ سے قومی خزانے کو سالانہ200ارب روپے کا نقصان پہنچ رہا ہے۔ نوٹیفکیشن کے مطابق اسمگل شدہ پیٹرولیم مصنوعات فروخت کرنے والے پمپس کیخلاف آپریشن کیا جائے گا، آپریشن میں رینجرز، کسٹمز، ایف سی اور ضلعی انتظامیہ حصہ لیں گی۔ حکم نامہ میں کہا گیا ہے کہ پمپ انتظامیہ تمام متعلقہ قانونی دستاویزات پیش کرنے کی پابند ہوں گی، قانونی دستاویزات پیش نہ کرنے پرپمپس مالکان کیخلاف قانونی کارروائی کے علاوہ پیٹرول پمپس کو سیل بھی کیا جائے گا۔ اس کے علاوہ اسمگل شدہ پیٹرولیم مصنوعات کی معلومات دینے والے کا ڈیٹا صیغہ راز میں رکھا جائے گا، اسمگل پٹرولیم مصنوعات فروخت کرنے پر کسٹمز ایکٹ کے تحت مقدمہ درج ہوگا۔ غیرقانونی کام میں ملوث پیٹرول پمپ مالکان کو5سے10سال قید کی سزاہوگی، اسمگل شدہ مصنوعات پٹرول پمپ، ٹینکر اور اسمگلرز کی جائیداد بھی ضبط کی جاسکتی ہے۔ان خیالات کا اظہار اسسٹنٹ کمشنر فاروق احمد ملک نے سب ڈویژن جام پور محمد پوردیوان مین انڈس ہاء وے پر نصف درجن کے قریب پٹرول پمپس جو ایرانی سمگل شدہ پٹرول فروخت کر رہیں تھیں  کارروائی وسیل کرتے ہوئے باہمراہ ایس ڈی پی او سرکل جام پور ثنااللہ خان مستوء ایس ایچ اوز ملک محمد رمضان شاہد عابد شریف گبول محکم سول ڈیفنس انچارج سیکیورٹی  ملک محمد یونس محمد حفیظ کھوکھر شامل تھے محمد پور میں 3پٹرول پمپ ارسلان پٹرولیم  واقع مین انڈس ہائی وے نزد بستی لاشاری  محبوب پٹرولیم سروس راجن پور روڈ وغوری پٹرولیم آدھی والا روڈ شامل تھے۔

جرمانے شروع

مزید :

ملتان صفحہ آخر -