آئمہ خان کاجوڈیشل،شوہراوردیورکاجسمانی ریمانڈ

آئمہ خان کاجوڈیشل،شوہراوردیورکاجسمانی ریمانڈ

  

  ملتان (خصو صی رپورٹر)ڈیوٹی جوڈیشل مجسٹریٹ  نے اڑھائی سالہ بچے کے اغوا میں ملوث ملزمہ ڈاکٹر آئمہ خان کا جوڈیشل ریمانڈ جبکہ ملزمہ کے شوہر مدثر اور دیور مظفر کا دو روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا۔ قبل ازیں فاضل عدالت میں پولیس تھانہ دہلی گیٹ نے ملزمان کے خلاف اڑھائی سالہ نقیب اللہ کے اغوا کا مقدمہ درج کیا تھا۔ ملزمان سے بچے کی بازیابی کی گئی اور ا(بقیہ نمبر10صفحہ6پر)

نہیں گرفتار کیا گیا۔تھانہ دہلی گیٹ کے علاقے کڑی جمنداں سے اڑھائی سالہ نقیب اللہ اغوا ہوا تھا اغوا کے مقدمہ میں گرفتار سٹیج اداکارہ آئمہ خان سمیت تین ملزمان کو عدالتی وقت ختم ہونے کے بعد ضلع کچہری لایا گیا ملزمان کو گرفتار ہونے کے 24 گھنٹوں سے بھی زیادہ وقت گزرنے کے بعد پیش کیا گیا، عدالتی وقت کے بعد کوئی جج موجود نہ ہونے کے باعث ملزمان کو پولیس واپس لے گئی۔ ڈاکٹر آئمہ خان میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رو پڑیں۔ اداکارہ کا کہنا تھا کہ میں بہت پریشان ہوں، میرا کیس سے کوئی تعلق نہیں۔میں بے گناہ ہوں مجھے بنیاد مقدمہ میں ملوث کردیا گیا۔واقعے کے متعلق حقائق عدالت میں بتاؤں گی، عدالت نے آئمہ خان کا جوڈیشل ریمانڈ، اسکے شوہر مدثر اور دیور مظفر کو دو روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا۔ پولیس ملزمان کو 4 بجے کے بعد عدالت لائی تھی ملزمان کو عدالتی وقت ختم ہونے کے بعد فاضل جج  کی رہائش گاہ پر پیش کیا گیا، وکلا محمد بلال بٹ، فرح شریف کھوسہ، ساجد ہاشمی اور فرحان منظور کا کہنا تھا کہ پولیس کا عدالتوں سے عدم تعاون کیسز کو متاثر کرتا ہے۔ اتنا وقت گزرنے کے بعد ملزمان کو پیش نہ کرنا انتہائی مجرمانہ غفلت ہے جس پر ملوث اہلکاروں و افسران کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے۔

آئمہ خان

مزید :

ملتان صفحہ آخر -